تائیوان کے ممبران پارلیمنٹ کے دورہ ہند سے تلملایا چین ، درج کرایا احتجاج

ین نے ہمیشہ اس بات کی مخالفت کی ہے کہ اس کے ساتھ سفارتی تعلقات رکھنے والے ملک تائیوان کے ساتھ کسی قسم کی کوئی سرکاری مذاکرات کریں اور اس سے کوئی سرکاری تعلقات قائم کریں۔

Feb 15, 2017 09:52 PM IST | Updated on: Feb 15, 2017 09:52 PM IST

بیجنگ: تائیوان کے تین ممبران پارلیمنٹ کے ایک وفد کے ہندوستان دورے سے ناخوش چین نے ہندوستان کے سامنے باضابطہ احتجاج درج کرایا ہے۔ وزارت خارجہ کے ترجمان گینگ شوآنگ نے آج یہاں باقاعدہ پریس بریفنگ میں کہا کہ تائیوان کی حکمراں ڈیموکریٹک پروگیسیو پارٹی کے کوان بی لنگ کی قیادت میں تین ممبران پارلیمنٹ کا وفد گذشتہ پیر سے ہندوستان کے دورے پر ہے۔ چین نے اس دورے پر ناخوشی ظاہر کرتے ہوئے ہندوستان کے سامنے اپنا سرکاری احتجاج درج کرایا ہے۔ چین نے ہمیشہ اس بات کی مخالفت کی ہے کہ اس کے ساتھ سفارتی تعلقات رکھنے والے ملک تائیوان کے ساتھ کسی قسم کی کوئی سرکاری مذاکرات کریں اور اس سے کوئی سرکاری تعلقات قائم کریں۔ تائیوان کے سلسلے میں چین کا یہ موقف بالکل واضح ہے۔

اس پر ہندوستان کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ تائیوان کے ممبران پارلیمنٹ کا یہ دورہ غیر رسمی تھا۔ وزارت کا کہنا ہے کہ اس طرح کے غیر سرکاری گروپ پہلے بھی کاروبار، مذہب اور سیاحت کے مقصد سے ہندوستان آتے رہے ہیں اور چین بھی جاتے رہے ہیں۔ اس میں کچھ بھی نیا یا منفرد نہیں ہے اور اس دورے کا کوئی سیاسی معنی نہیں نکالنا چاہیے۔

تائیوان کے ممبران پارلیمنٹ کے دورہ ہند سے تلملایا چین ، درج کرایا احتجاج

سرکاری ذرائع کے مطابق ارکان پارلیمنٹ کو کل تائیوان واپس ہونا ہے۔ ہندوستان میں یہ وفد تائیوان کی سب سے بڑی اسٹیل مینوفیکچرر چائناا سٹیل کا بھی دورہ کرنے والا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز