فوجی سربراہ راوت کے دوہری جنگ والے بیان پر چین کا شدید اعتراض، کہی یہ بات

Sep 08, 2017 12:00 AM IST | Updated on: Sep 08, 2017 12:00 AM IST

نئی دہلی: فوجی سربراہ جنرل بپن راوت کے چین اور پاکستان کی جانب سے دو طرفہ حملہ کرنے کی وارننگ کے سلسلے میں بیان پر چین نے سخت اعتراض کیا ہے۔ چینی حکومت کے ترجمان جینگ شوانگ نے آج یہاں ایک بیان میں کہاکہ ہندستانی فوجی سربراہ کا بیان آپسی تعاون کے اس جذبہ کے خلاف ہے جس کیلئے چین کے صدر شی جن پنگ اور ہندستانی وزیر اعظم نریندر مودی نے برکس کانفرنس کے باہرالگ سے ملاقات کی تھی۔

انہوں نے کہاکہ صرف دو دن پہلے مسٹر جن پنگ نے مسٹر مودی سے کہا تھا کہ دونوں ممالک ایک دوسرے کی ترقی کیلئے خطرہ نہیں بلکہ مواقع ہیں۔ ہم نہیں جانتے کہ ہندستانی حکومت کی نمائندگی کرتےہوئے جنرل راوت نے ایسا کہا ہے یا یہ ان کے ذاتی خیالات تھے۔ واضح رہےکہ بدھ کے روز ایک میٹنگ سے خطاب کرتےہوئے جنرل راوت نے کہا تھاکہ چین نے جنگ کیلئے کمر کسنا شروع کردیا ہے۔

فوجی سربراہ راوت کے دوہری جنگ والے بیان پر چین کا شدید اعتراض، کہی یہ بات

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز