Live Results Assembly Elections 2018

اب چین نے سادھا این ایس اے پر نشانہ، کہا ڈوكلام تنازعہ کے پیچھے اجیت ڈوبھال کا دماغ

چینی اخبار گلوبل ٹائمز نے لکھا ہے کہ چینی اور ہندوستانی فوج کے درمیان موجودہ سرحدی تعطل کے پیچھے اجیت ڈوبھال کا رول ہے۔

Jul 25, 2017 12:15 PM IST | Updated on: Jul 25, 2017 12:15 PM IST

نئی دہلی۔ چینی میڈیا مسلسل ڈوكلام تنازعہ کو لے کر ہندوستان پر حملہ کر رہا ہے۔ اس بار چین نے قومی سلامتی کے مشیر اجیت ڈوبھال کو نشانے پر لیا ہے۔ چینی اخبار گلوبل ٹائمز نے لکھا ہے کہ چینی اور ہندوستانی فوج کے درمیان موجودہ سرحدی تعطل کے پیچھے اجیت ڈوبھال کا رول ہے۔ اخبار نے لکھا ہے کہ سرحد پر چینی۔ ہندوستانی فوج کے تعطل کے پیچھے ڈوبھال ہی ہیں اور ہندوستانی میڈیا ایسا ماحول بنا رہا ہے کہ جیسے ان کے سفر سے دونوں ممالک کے درمیان سب ٹھیک ہو جائے گا۔ بتا دیں کہ اجیت ڈوبھال 27 جولائی کو برکس کے اجلاس میں حصہ لینے بیجنگ جائیں گے۔

گلوبل ٹائمز نے لکھا ہے کہ بیجنگ اس بات پر قائم ہے کہ دونوں فریقوں کے درمیان بامعنی بات چیت کے لئے پہلی شرط چینی علاقے سے ہندوستان کا پیچھے ہٹنا ہے۔ جب تک ہندوستانی فوج غیر مشروط طور پر پیچھے نہیں ہٹتی تب تک چین  ہندوستان کے ساتھ بات چیت نہیں کرے گا۔ نئی دہلی کو اس وہم میں نہیں رہنا چاہئے اور یقینی طور پر ڈوبھال کا بیجنگ دورہ دونوں ممالک کے درمیان معاملہ سلجھانے کا موقع نہیں ہے۔

اب چین نے سادھا این ایس اے پر نشانہ، کہا ڈوكلام تنازعہ کے پیچھے اجیت ڈوبھال کا دماغ

فائل فوٹو

Loading...

اخبار نے لکھا ہے کہ برکس قومی سلامتی مشیر کا اجلاس ایک باقاعدہ کانفرنس ہے جو برکس کانفرنس سے پہلے کی تیاری کے لئے ہوتی ہے۔ یہ ہندوستان -چین سرحدی تنازعے کو حل کرنے کا پلیٹ فارم نہیں ہے۔ مضمون میں کہا گیا ہے کہ چینی فوج اتنی سخت کارروائی کر سکتی ہے جو ہندوستانی حکومت اور فوج سوچ بھی نہیں سکتے ہیں۔ ہمیں نہیں لگتا کہ ہندوستان چین کے ساتھ فوجی تصادم کے لئے تیار ہے۔ اگر ہندوستان اس راستے کو منتخب کرتا ہے تو چین اپنی حفاظت کے لئے مکمل طور پر اہل ہے۔ نئی دہلی کو اس کی بھاری قیمت چکانی ہو گی۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز