جموں و کشمیر : نماز جمعہ کے بعد متعدد مقامات پر پرتشدد جھڑپیں ، متعدد زخمی ، پولیس نے کیا لاٹھی چارج

Jun 02, 2017 05:36 PM IST | Updated on: Jun 02, 2017 05:36 PM IST

سری نگر: وادی کشمیر میں آج متعدد مقامات بشمول گرمائی دارالحکومت سری نگر کے پائین شہر ، جنوبی کشمیر کے قصبہ اننت ناگ اور شمالی کشمیر کے ایپل ٹاون سوپور میں نماز جمعہ کی ادائیگی کے بعد پرتشدد احتجاجی مظاہرے بھڑک اٹھے جن کے دوران سیکورٹی فورسز نے پتھراؤ کے مرتکب احتجاجیوں کو منتشر کرنے کے لئے لاٹھی چارج اور آنسو گیس کا استعمال کیا۔

احتجاجی لوگ 27 مئی کو جنوبی ضلع پلوامہ کے سیموہ ترال میں سیکورٹی فورسز کے ساتھ جھڑپ میں حزب المجاہدین کے معروف کمانڈر سبزار احمد بٹ کے سمیت دو جنگجوؤں کی ہلاکت کے خلاف احتجاج کررہے تھے۔ جھڑپوں کے دوران چند ایک افراد کو معمولی نوعیت کی چوٹیں آنے کی اطلاعات ہیں۔

جموں و کشمیر : نماز جمعہ کے بعد متعدد مقامات پر پرتشدد جھڑپیں ، متعدد زخمی ، پولیس نے کیا لاٹھی چارج

سری نگر کی تاریخی جامع مسجد میں نماز جمعہ کی ادائیگی کے فوراً بعد لوگوں کی ایک بڑی تعداد کشمیر کی آزادی کے حق میں نعرے بازی کرتے ہوئے جلوس کی صورت میں نوہٹہ چوک کی طرف بڑھنے لگی۔ تاہم وہاں پہلے سے تعینات سیکورٹی فورسز کی بھاری جمعیت نے احتجاجیوں کا راستہ روکا جس کے نتیجے میں کچھ نوجوان مشتعل ہوئے اور سیکورٹی فورسز پر پتھراؤ کرنے لگے۔

سیکورٹی فورسز نے احتجاجیوں کو منتشر کرنے کے لئے لاٹھی چارج اور اشک آور گیس کے گولوں کا شدید استعمال کیا۔ طرفین کے مابین جھڑپوں کا سلسلہ کچھ دیر تک جاری رہا۔ جنوبی کشمیر کے قصبہ اننت ناگ میں نماز جمعہ کی ادائیگی کے بعد احتجاجی مظاہرین اور سیکورٹی فورسز کے مابین جھڑپیں ہوئیں۔

موصولہ اطلاعات کے مطابق نماز جمعہ کی ادائیگی کے بعد قصبہ اننت ناگ کے ریشی بازار اور لال چوک میں احتجاجی مظاہرے بھڑک اٹھے جن کے دوران سیکورٹی فورسز نے احتجاجیوں کو منتشر کرنے کے لئے اشک آور گیس کے گولوں کا استعمال کیا۔ دریں اثنا شمالی ضلع بارہمولہ کے ایپل ٹاون سوپور کی جامع مسجد میں نماز جمعہ کی ادائیگی کے بعد علاقہ میں بڑے پیمانے پر آزادی حامی احتجاجی مظاہرے بھڑک اٹھے۔

سوپور سے موصولہ اطلاعات کے مطابق نماز کی ادائیگی کے بعد سینکڑوں کی تعداد میں لوگ آزادی حامی نعرے لگاتے ہوئے سڑکوں پر نکل آئے جن کو منتشر کرنے کے لئے سیکورٹی فورسز نے آنسو گیس کا استعمال کیا۔ طرفین کے درمیان جھڑپوں کا سلسلہ کچھ دیر تک جاری رہا۔ اطلاعات کے مطابق احتجاجی لوگ سوپور کے نتھی پورہ زینہ گیر میں جمعرات کو مارے گئے دو مقامی جنگجوؤں کی ہلاکت کے خلاف احتجاج کررہے تھے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز