بابری مسجد تنازع : کانگریس ہوئی محتاط ، کپل سبل سے گجرات اسمبلی انتخابات سے دور رہنے کیلئے کہا

Dec 07, 2017 08:33 PM IST | Updated on: Dec 07, 2017 08:33 PM IST

نئی دہلی : سپریم کورٹ میں بابری مسجد کی سماعت کو 2019 تک ملتوی کرنے کی کپل سبل کی درخواست پر بی جے پی کے ذریعہ سیاسی ہنگامہ آرائی کے پیش نظر اب کانگریس محتاط ہوتی ہوئی نظر آرہی ہے ۔ ذرائع کے مطابق کانگریس نے کپل سبل کو گجرات اسمبلی انتخابات سے دور رہنے کیلئے کہا ہے ۔ قابل ذکر ہے کہ بی جے پی اس معاملہ کو گجرات میں زور و شور سے اٹھارہی ہے ، جس کی وجہ سے کانگریس نے پولرائزیشن کی سیاست کے سد باب کیلئے یہ قدم اٹھایا ہے ۔

کانگریس کے لیڈر سندیپ دیکشت نے اعتراف کیا کہ عوامی زندگی اور سیاست دونوں میں فعال ہونے پر وکیلوں کو کبھی بھی محتاط ہونا پڑتا ہے۔ تاہم بی جے پی کے ذریعہ واویلا مچانے پر کپل سبل نے گزشتہ روز ہی بیان جاری کرکے کہہ دیا تھا کہ ہماری آستھا بھگوان رام میں ہیں اور جب بھگوان رام چاہیں گے ، تبھی رام مندر کی تعمیر ہوگی ، مودی جی کے کہنے سے نہیں ہوگی ۔

بابری مسجد تنازع : کانگریس ہوئی محتاط ، کپل سبل سے گجرات اسمبلی انتخابات سے دور رہنے کیلئے کہا

ساتھ ہی ساتھ انہوں نے یہ بھی کہا تھا کہ وہ سنی وقف بورڈ کی نمائندگی نہیں کررہے ہیں اور وزیر اعظم مودی معلوما ت کے بغیر ہی بول رہے ہیں۔ غور طلب ہے کہ ایودھیا معاملہ کی سماعت کے دوران کپل سبل نے سپریم کورٹ سے درخواست کی تھی اس معاملہ کی سماعت 2019 لوک سبھا انتخابات کے بعد شرو ع کی جائے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز