Live Results Assembly Elections 2018

حکومت نوٹ بندی سے متعلق دستاویزات کو عام کرنے سے خوفزدہ کیوں: چدمبرم

نئی دہلی۔ سابق وزیر خزانہ اور کانگریس کے سینئر لیڈر پی چدمبرم نے نوٹ بندي کو معقول فیصلہ بتانے کے وزیر خزانہ ارون جیٹلی کے بیان پر انہیں آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے آج کہا کہ اگر حکومت اپنے اس فیصلے پر اس قدر مطمئن ہے تو وہ اس سے متعلق ریزرو بینک کے دستاویزات کو عام کرنے سے کیوں ڈر رہی ہے؟

Nov 08, 2017 08:30 PM IST | Updated on: Nov 08, 2017 08:30 PM IST

نئی دہلی۔ سابق وزیر خزانہ اور کانگریس کے سینئر لیڈر پی چدمبرم نے نوٹ بندي کو معقول فیصلہ بتانے کے وزیر خزانہ ارون جیٹلی کے بیان پر انہیں آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے آج کہا کہ اگر حکومت اپنے اس فیصلے پر اس قدر مطمئن ہے تو وہ اس سے متعلق ریزرو بینک کے دستاویزات کو عام کرنے سے کیوں ڈر رہی ہے؟ مسٹر چدمبرم نے نوٹ بندي کے ایک سال مکمل ہونے کے موقع پر آج یکے بعد دیگرے کئی ٹویٹ کر کے کہا کہ حکومت کو شفافیت لانے کے لئے آر بی آئی بورڈ کے ایجنڈے اور اس سے متعلق دستاویزات اور آر بی آئی کے سابق گورنر ڈاکٹر رگھو رام راجن کے نوٹ کو عام کرنا چاہئے۔ انہوں نے مسٹر جیٹلی کو چیلنج کرتے ہوئے کہا کہ اگر حکومت نوٹ بندي کے فیصلے پر مطمئن ہے تو وہ ان دستاویزات جاری کرنے سے کیوں کترارہی ہے؟

سابق وزیر خزانہ نے کہا کہ حکومت کا کہنا ہے کہ نوٹ بندی سے کالے دھن کا خاتمہ ہو گیا لیکن جس کالے دھن کے صفایا کی بات کہی جا رہی ہے وہ گجرات اسمبلی کے انتخابات کے دوران لو گوں کو صاف دکھائی دینے لگے گا۔ مودی حکومت کا یہ بھی کہنا ہے کہ نوٹ بندي کے بعد پرانے نوٹ تبدیل کر کے کالے دھن کو سفید کیا گیا۔ اگر ایسا ہو اہے تو یہ سہولت کس نے دی ؟ ظاہر ہے کہ اس حکومت نے ہی یہ سہولت دی ہے۔ نوٹ بندي کو اخلاقی فیصلہ بتانے کے لئے مسٹر جیٹلی پر تنقید کرتے ہوئے مسٹر چدمبرم نے سوال کیا کہ کیا ملک کے کروڑوں عوام خاص طور پر 15 کروڑ یومیہ مزدوروں پر قہر برپا کرنا اخلاقی قدم ہے؟ سورت، بھیونڈی، مرادآباد، آگرہ، لدھیانہ اور تریپور جیسے پھلتے -پھولتے صنعتی مراکز کو تباہ کرنا کیا اخلاقی قدم ہے؟

حکومت نوٹ بندی سے متعلق دستاویزات کو عام کرنے سے خوفزدہ کیوں: چدمبرم

سابق وزیر خزانہ اور کانگریس کے سینئر لیڈر پی چدمبرم: فائل فوٹو۔

انہوں نے کہا کہ کیا کوئی اس بات سے انکار کر سکتا ہے کہ نوٹ بندي کی وجہ سے معصوم لوگوں کی جانیں گئیں، چھوٹے کاروبار بند ہوئے اور لوگوں کے روزگار چھین لئے گئے۔سابق وزیر خزانہ نے بی بی سی کی اس خبر کا بھی حوالہ دیا ہے جس میں کہا گیا تھا کہ مودی کے نقدی کے داؤ نے ہندوستانی معیشت کو نقصان پہنچایا ہے۔ انہوں نے حکومت سے سوال کیا کہ کیا بی بی سی بھی کالا دھن اور بدعنوانی کی حامی ہے۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز