ہیگڑے کے آئین سے متعلق بیان کو لے کر کانگریس نے مودی حکومت اور آر ایس ایس پر سادھا نشانہ

کانگریس نے دستور ہند کو بدلنے سے متعلق مرکزی وزیر اننت کمار ہیگڑے کے بیان پر احتجاج درج کراتے ہوئے آج کہا کہ مودی حکومت کے وزراء کے الٹے سیدھے بیان این ڈی اے کے طے شدہ ایجنڈے کا حصہ ہیں

Dec 26, 2017 09:52 PM IST | Updated on: Dec 26, 2017 10:06 PM IST

نئی دہلی: کانگریس نے دستور ہند کو بدلنے سے متعلق مرکزی وزیر اننت کمار ہیگڑے کے بیان پر احتجاج درج کراتے ہوئے آج کہا کہ مودی حکومت کے وزراء کے الٹے سیدھے بیان این ڈی اے کے طے شدہ ایجنڈے کا حصہ ہیں اور اس سے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) اور راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) کا اصلی چہرہ سامنے آ رہا ہے۔

کانگریس کے ترجمان گورو گوگوئی اور خوشبو سندرنے یہاں پارٹی کی معمول پریس بریفنگ میں صحافیوں کو بتایا کہ مسٹر ہیگڑےکے بیان سے بی جے پی کا آئین مخالف چال، چہرہ اور کردار اجاگر ہوتا ہے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ ایک ایجنڈے کے تحت مل کے آئین پر حملہ کیا جا رہا ہے، لیکن کانگریس آئین کا کردار تبدیل کرنے کی کسی بھی کوشش کے خلاف کھڑی رہے گی ۔

ہیگڑے کے آئین سے متعلق بیان کو لے کر کانگریس نے مودی حکومت اور آر ایس ایس پر سادھا نشانہ

وزیر اعظم نریندر مودی ۔ فوٹو نیوز 18 ہندی ۔

انہوں نے کہا کہ آئین کو بدلنے کی بات صرف مسٹر ہیگڑے ہی نہیں کر رہے ہیں، بلکہ اس کے پیچھے ایک نظریہ ہے اور مرکزی وزیر اسی نظریے کے تحت اس طرح کی باتیں کر رہے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ سیاسی روٹیاں سینکنے کے مقصد سے جو لوگ اس طرح کے بیان دے رہے ہیں، ان کے مقاصد کو پورا نہیں ہونے دیا جائے گا۔ ترجمان نے کہا کہ اسی طرح سے اترپردیش حکومت کے ایک وزیر اوم پرکاش راج بھر نے دلتوں کی توہین کی ہے اور یہ بی جے پی حکومت کی دلت مخالف ذہنیت کی علامت ہے۔ مرکزی وزیر ہنسراج اهير نے سینئر ڈاكٹروں کا موازنہ نکسلیوں سے کیا ہے۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز