ایس پی - بی ایس پی اتحاد سے باہر رکھے جانے پر راہل گاندھی نے کہا : ان کا پورا احترام ، سب کو چونکائیں گے

راہل گاندھی نے کہا کہ میں ایس پی اور بی ایس پی کے لیڈروں کی کافی عزت کرتا ہوں ، وہ جو بھی کرنا چاہتے ہیں ، اس کا انہیں حق ہے ، اب کانگریس کو اترپردیش میں اکیلے کھڑا ہونا ہوگا ۔

Jan 13, 2019 08:26 AM IST | Updated on: Jan 13, 2019 08:56 AM IST

لوک سبھا انتخابات میں بی جے پی سے مقابلہ کیلئے اترپردیش میں سماجوادی پارٹی اور بی ایس پی کے درمیان ہوئے اتحاد سے بے فکر کانگریس کے صدر راہل گاندھی نے اس بات کا اعادہ کیا کہ اگلے لوک سبھا انتخابات میں کانگریس پارٹی اپنی کارکردگی سے سب کو چونکا دے گی ۔

دبئی میں ایک پریس کانفرنس کے دوران راہل گاندھی نے کہا کہ میں ایس پی اور بی ایس پی کے لیڈروں کی کافی عزت کرتا ہوں ، وہ جو بھی کرنا چاہتے ہیں ، اس کا انہیں حق ہے ، اب کانگریس کو اترپردیش میں اکیلے کھڑا ہونا ہوگا ۔ راہل کے اس بیان سے صاف ہوجاتا ہے کہ کانگریس اترپردیش میں اکیلے الیکشن لڑنے کا ارادہ بناچکی ہے ، جس سے ملک کی سیاست کے اعتبار سے کافی اہم مانی جانے والی اس ریاست میں مقابلہ سہ رخی ہوتا ہوا نظر آرہا ہے۔

ایس پی - بی ایس پی اتحاد سے باہر رکھے جانے پر راہل گاندھی نے کہا : ان کا پورا احترام ، سب کو چونکائیں گے

ایس پی -بی ایس پی اتحاد سے باہر رکھے جانے پر راہل گاندھی نے کہا : ان کا پورا احترام ، ہم سب کو چونکائیں گے

راہل گاندھی نے ساتھ ہی ساتھ کہا کہ کانگریس کے پاس اترپردیش کے لوگوں کو دینے کیلئے بہت کچھ ہے۔ یہ ہمارے اوپر منحصر کرتا ہے کہ اترپردیش میں کانگریس کو ہم کتنا مضبوط کرپاتے ہیں ۔ ہم اترپردیش میں اپنی پوری شدت کے ساتھ لڑیں گے اور لوگوں کو سرپرائز دیں گے ۔

ایس پی اور بی ایس پی میں شامل نہیں کئے جانے کو کانگریس کیلئے جھٹکا ماننے سے انکار کرتے ہوئے راہل گاندھی نے کہا کہ یہ معنی نہیں رکھتا کہ ان کی پارٹی تنہا انتخاب لڑے گی یا پھر ایس پی اور بی ایس پی کے ساتھ مل کر ، کیونکہ آخری نتائج تو ویسے ہی رہنے والے ہیں ۔ بی جے پی وہاں ہارنے والی ہے۔

Loading...

Loading...