کیرالہ کی طرز پر یوپی میں کانگریس - سماج وادی پارٹی اتحاد کو کامیابی ملے گی: روی

نئی دہلی۔ سابق مرکزی وزیر اور کانگریس لیڈر وايلار روی نے آج کہا کہ جس طرح کیرالہ میں کانگریس اور انڈین یونین آف مسلم لیگ کا اتحاد کامیاب رہا ہے اسی طرح اترپردیش میں کانگریس -سماجوادي پارٹی (ایس پی) اتحاد کو کامیابی ملے گی۔

Feb 02, 2017 04:18 PM IST | Updated on: Feb 02, 2017 04:18 PM IST

نئی دہلی۔  سابق مرکزی وزیر اور کانگریس لیڈر وايلار روی نے آج کہا کہ جس طرح کیرالہ میں کانگریس اور انڈین یونین آف مسلم لیگ کا اتحاد کامیاب رہا ہے اسی طرح اترپردیش میں کانگریس -سماجوادي پارٹی (ایس پی) اتحاد کو کامیابی ملے گی۔ مسٹر روی نے یہاں یو این آئی کے ساتھ خصوصی بات چیت میں کہا کہ کیرالہ میں انڈین یونین مسلم لیگ (آئی یو ایم ایل) کے ساتھ اتحاد سے کانگریس کو برسوں سے مدد ملی ہے۔ کیرالہ کے تجربے کی بنیاد پر یہ توقع کی جا سکتی ہے کہ اترپردیش میں کانگریس -ایس پی اتحاد سے دونوں پارٹیوں کو فائدہ ہو گا۔

سابق وزیر اعظم پی وی نرسمہا راؤ کے ساتھ کام کر چکے مسٹر روی نے کہا کہ بابری مسجد انہدام سے کانگریس کو نقصان ہوا اور خاص طور پر مسلمانوں میں اس کا مینڈیٹ کم ہو گیا۔ہمیں انہیں پھر سے اپنے ساتھ لانا ہوگا۔ اتر پردیش میں کانگریس کی پوزیشن مضبوط بنانے کے لئے اس کمیونٹی کے لوگوں کو ساتھ لانا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ مسلمانوں کو شاید یہ سمجھ میں آ گیا ہو گا کہ علاقائی پارٹیاں سماجی اور اقتصادی طور پر ان کے مفادات کی حفاظت نہیں کر سکتی ہیں،اس لئے وہ فطری طور سے کانگریس کا متبادل اختیار کریں گے۔

کیرالہ کی طرز پر یوپی میں کانگریس - سماج وادی پارٹی اتحاد کو کامیابی ملے گی: روی

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز