گجرات میں الیکشن ہارے ، مگر ہم نے عوام کا دل جیتا : کانگریس

کانگریس نے آج کہاکہ گجرات میں اس نے محاذ ضرور ہارا ہے لیکن جنگ جیت لی ہے اور گھمنڈ، پیسہ اور طاقت کے زور پر ، اقتدار کی طاقت بنیاد پر الیکشن جیتنے اور کانگریس سے پاک ہندستان کا خواب دیکھنے والوں کو شکست دی ہے۔

Dec 18, 2017 07:48 PM IST | Updated on: Dec 18, 2017 07:48 PM IST

نئی دہلی: کانگریس نے آج کہاکہ گجرات میں اس نے محاذ ضرور ہارا ہے لیکن جنگ جیت لی ہے اور گھمنڈ، پیسہ اور طاقت کے زور پر ، اقتدار کی طاقت بنیاد پر الیکشن جیتنے اور کانگریس سے پاک ہندستان کا خواب دیکھنے والوں کو شکست دی ہے۔ کانگریس کے گجرات کے انچارج جنرل سکریٹری اشوک گہلوت ، سینئر لیڈر سشیل کمار شندے اور محکمہ مواصلات کے سربراہ رندیپ سنگھ سرجے والا نے یہاں پریس کانفرنس میں کہاکہ گجرات انتخابات میں پارٹی صدر راہل راہل گاندھی اور کانگریس کی اخلاقی جیت ہوئی ہے۔ کانگریس نے وزیراعظم نریندر مودی اور بھارتیہ جنتا پارٹی کے صدر امت شاہ کو ان کے گھر میں گھس کر مات دی ہے۔

کانگریس کے ہماچل پردیش کے انچارج سشیل کمار شندے نے کہاکہ ریاستی اسمبلی انتخابات میں بی جے پی پچاس سیٹ جیتنے کی بات کرتی تھی لیکن وہاں بھی اسے تگڑا جھٹکا لگا ہے اور کانگریس نے اسے اچھی ٹکر دی ہے۔ بی جے پی کے ریاستی صدر اور وزیراعلی کے عہدہ کے امیدوار ہی الیکشن ہار گئے ہیں۔ مسٹر گہلوت نے الزام لگایا کہ بی جے پی نے گجرات الیکشن میں صف بندی کی کوشش کی لیکن وہ نہیں چلی ، پھر نرمدا کی بات کی، لیکن وہ بھی نہیں چلی۔’ سی پلین‘ کو بھی اتار دیا لیکن بات تب بھی نہیں بنتی نظر نہیں آئی تو مسٹر مودی نے الیکشن جیتنے کے لئے جذباتی طریقہ اختیار کیا اور کہاکہ وہ گجرات کے بیٹے ہیں اور یہ الیکشن ان کی عزت و وقار اور وجود کا سوال بن گیا ہے۔

گجرات میں الیکشن ہارے ، مگر ہم نے عوام کا دل جیتا : کانگریس

کانگریس لیڈر نے کہاکہ گجرات الیکشن میں جس طرح سے کانگریس کی کارکردگی رہی ہے اس کا سہرا مسٹر گاندھی کے سر جاتا ہے۔ انہوں نے انتخابی تشہیر کے دوران جو پیدل یاترائیں کیں اور جو ماحول بنایا اس نے سابق وزیراعظم اندراگاندھی کے انتخابی تشہیر کے طریقہ کی یاد کو تازہ کردیا ۔ مسٹر گاندھی کی قیادت میں لیڈروں اور کارکنوں یہ الیکشن لڑا اور اس میں ’بی جے پی بھی جیتی نہیں ہے اور کانگریس بھی ہاری نہیں ہے‘۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز