حق رازداری کے فیصلہ پر کانگریس نے کہا، آج ایک بار پھر ہم اپنی آزادی کا جشن منا سکتے ہیں

نئی دہلی ۔ حق رازداری کو بنیادی حق قرار دینے کے سپریم کورٹ کے فیصلے کو ’’تاریخی ‘‘قرار دیتے ہوئے آج کانگریس نے کہا ہے کہ اس طرح حکومت کی اس کوشش کو جھٹکا لگا ہے جس کے تحت یہ استدال کیا جارہا تھا کہ رازداری بنیادی حق نہیں ہے۔

Aug 24, 2017 04:05 PM IST | Updated on: Aug 24, 2017 04:07 PM IST

نئی دہلی ۔ حق رازداری کو بنیادی حق قرار دینے کے سپریم کورٹ کے فیصلے کو ’’تاریخی ‘‘قرار دیتے ہوئے آج کانگریس نے کہا ہے کہ اس طرح حکومت کی اس کوشش کو جھٹکا لگا ہے جس کے تحت یہ استدال کیا جارہا تھا کہ رازداری بنیادی حق نہیں ہے۔ کل ہند کانگریس کے سینئر ترجمان اور سابق وزیر خزانہ پی چدمبرم نے یہاں کانگریس کے میڈیا انچارج رندیپ سورجے والا کے ساتھ ایک مشترکہ پریس کانفرنس میں کہا کہ ’’ کانگریس پارٹی سپریم کورٹ کے اس متفقہ فیصلے کا خیرمقدم کرتی ہے جس میں حق رازداری کو بنیادی حق قرار دیا گیا ہے۔ آج کے اس تاریخی فیصلے کو آئین ہند کے نفاذ کے بعد سپریم کورٹ کے انتہائی اہم فیصلوں میں سے ایک سمجھا جائے گا۔

رازداری کو انتہائی بنیادی ذاتی آزادی سے تعبیر کرتے ہوئے مسٹر چدمبرم نے کہا کہ آئین کے دفعہ 21 میں اسے ملک کے کسی شہری کے انتہائی اہم بنیادی حق کے طور پر شامل کیا گیا ہے۔ اس کا تعلق زندگی اور آزادی کے حق سے ہے۔مہذب معاشروں میں اس حق کا تحفظ کیا جاتا ہےکیونکہ رازداری کو زندگی سے الگ نہیں کیا جاسکتا۔ اس لحاظ سے سپریم کورٹ کے آج کے فیصلے نے آرٹیکل ۲۱ کو ایک نئی معنویت عطا کی ہے۔ اسی پریس کانفرنس میں جس میں سینئر کانگریسی رہنما منی شنکر ایئر بھی موجود تھے ، مسٹر سورجے والا نے کہا کہ سپریم کورٹ کا یہ فیصلہ بی جے پی کی حکمرانی والی ان ریاستوں کے منھ پر طمانچہ ہے، جن ریاستوں نے حق رازداری کو بنیادی حق تسلیم کرنے سے انکار کیا تھا۔ ’’سپریم کورٹ کا فیصلہ بی جے کی حکمرانی والی ان ریاستوں کے منھ پر طمانچہ ہے جن ریاستوں نے کہا تھا کہ حق رازداری بنیادی حق نہیں ہے‘‘۔

حق رازداری کے فیصلہ پر کانگریس نے کہا، آج ایک بار پھر ہم اپنی آزادی کا جشن منا سکتے ہیں

مسٹر چدمبرم نے اسی موضوع پر اظہار خیال جاری رکھتے ہوئے کہا کہ کانگریس کو سپریم کورٹ کے اس فیصلے پر فخر ہے اور ہم عدالت عظمی اور اس محاذ پر انتھک محنت کرنے والے سینئر اور جونیئر وکیلوں کو سلام پیش کرتے ہیں جنہوں نے انتہائی غریق تحقیق کے بعد عدالت کے سامنے اطمیان بخش دلائل پیش کئے ۔

سینئر کانگریس لیڈر پی چدمبرم: فائل فوٹو سینئر کانگریس لیڈر پی چدمبرم: فائل فوٹو

یہ اندیشہ ظاہر کرتے ہوئے کہ مستقبل میں حق رازداری کو اور بھی آزمائشوں کا سامنا ہوسکتا ہے مسٹر چدمبرم نے کہا کہ بہرحال کانگریس ان آزمائشوں سے کامیاب گزرنے کی کوشش کرے گی ۔’’ آج ایک بار پھر ہم اپنی آزادی کا جشن منا سکتے ہیں۔ کل نئی آزمائشوں اور دوسرے سوالات کے علاوہ حق رازداری میں مداخلت کی مزید کوششوں کا سامنا ہوسکتا ہے ۔ ہم ان آزمائشوں سے بھی سلامت گزریں گے‘‘۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز