ورلڈ بینک کی رپورٹ صرف دہلی اورممبئی میں سروے پر مبنی ، نوٹ بندی اور جی ایس ٹی کے اثرات کا ذکر نہیں : کانگریس

Nov 01, 2017 11:10 PM IST | Updated on: Nov 01, 2017 11:10 PM IST

نئی دہلی  : کانگریس نے آج کہا کہ کاروبار میں آسانی کے سلسلے میں عالمی بینک کے جس 'سرٹیفکیٹ' پر حکومت اپنی پیٹھ تھپتھپا رہی ہے وہ حقیقت سے دور ہے کیونکہ ملک کے چھوٹے تاجر سسک رہے ہيں۔  کانگریس کے ترجمان کپّل سبل اور ایم پی راجیو شکلا نے پارٹی ہیڈ کوارٹر میں معمول کی پریس بریفنگ میں یہ بات کہی۔

مسٹر شکلا نے کہا کہ ورلڈ بینک کی یہ رپورٹ صرف دہلی اور ممبئی میں سروے پر مبنی ہے اور اس میں نوٹ بندي اور جی ایس ٹی کے اثرات کا ذکر نہیں ہے۔ چھوٹے شہروں اور چھوٹے تاجروں میں کاروبار کے لئے بہت سے سرٹیفکیٹ لینے پڑرہے ہیں۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ عالمی بینک کی اس رپورٹ پر تو حکومت واہ واہی لوٹ رہی ہے لیکن جب بھوکے لوگوں کی عالمی فہرست میں ہندوستان سوویں مقام پر آيا تو وزیر اعظم نریندر مودی، ان کے کسی وزیر یا بی جے پی صدر امت شاہ نے نہ تو ٹویٹ کیا اور نہ کو ئی بیان جاری کیا۔

ورلڈ بینک کی رپورٹ  صرف دہلی اورممبئی میں سروے پر مبنی ، نوٹ بندی اور جی ایس ٹی کے اثرات کا ذکر نہیں : کانگریس

گیٹی امیجیز

مسٹر سبل نے کہا کہ صرف بڑے تاجروں کے لئے کاروبار کرنا آسان ہوا ہے جبکہ چھوٹے تاجروں کو 37 ریٹرن فائل کرنا پڑ رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو ورلڈ بینک کے بجائے عوام سے 'سرٹیفکیٹ' لینا چاہئے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز