گئو رکشکوں کے تشدد پر سپریم کورٹ سخت ، ریاستی حکومتیں متاثرین دیں کو معاوضہ ، رپورٹ طلب

Sep 22, 2017 03:23 PM IST | Updated on: Sep 22, 2017 06:02 PM IST

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے آج کہا ہے کہ ذمہ داری ریاستوں کی ہے کہ وہ گئو رکشا کے نام پر ہونے والے تشدد کے شکار لوگوں کو معاوضہ دے۔ چیف جسٹس دیپک مشرا کی صدارت والی بنچ نے کانگریس لیڈر تحسین پوناوالا اور دیگرعرضی گزاروں کی درخواستوں کی سماعت کے دوران اپنے چھ ستمبر کے حکم پر عمل درآمد کے لئے سبھی ریاستوں سے صورتحال کی رپورٹ مانگی ہے۔

سماعت کے دوران آج گجرات، راجستھان، جھارکھنڈ، کرناٹک اور اترپردیش نے عدالت عظمی میں اپنی رپورٹ داخل کردی ہے۔ عدالت نے بقیہ ریاستوں سے بھی کہا ہے کہ وہ جلد از جلد رپورٹ جمع کردیں۔ اس معاملے پر آئندہ سماعت 31اکتوبر کو ہوگی۔

گئو رکشکوں کے تشدد پر سپریم کورٹ سخت ، ریاستی حکومتیں متاثرین دیں کو معاوضہ ، رپورٹ طلب

سپریم کورٹ آف انڈیا: فائل فوٹو

واضح رہے کہ گزشتہ چھ ستمبر کی سماعت کے دوران عدالت نے کہا تھا کہ حکومتیں گئو رکشا کے نام پر جاری تشددکوروکنے کے لئے قدم اٹھائیں۔ عدالت نے ریاستی حکومت کو اس بابت سخت قدم اٹھانے کی تلقین کی تھی۔ عدالت نے ایسے واقعات پر لگام کسنے کے لئے ہر ضلع میں نوڈل افسر مقرر کرنے اور ایک ہفتے کے دوران پورا عملہ تیار کرنے کا حکم دیاتھا۔ عدالت عظمی نے گئو رکشکوں  کے حالیہ حملوں کو ذہن میں رکھتے ہوئے ہر ریاست کے چیف سکریٹریوں سے کہا تھا کہ وہ متعلقہ پولیس سپرنٹنڈنٹوں کی مدد سے قومی شاہراہوں کو گئو رکشکوں  سے محفوظ رکھیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز