بی ایچ یو ہنگامہ : کرائم برانچ نے شروع کی جانچ ، تقریبا ایک درجن طلبہ و طالبات کو نوٹس

Oct 01, 2017 06:02 PM IST | Updated on: Oct 01, 2017 06:02 PM IST

وارانسی : بنارس ہندو یونیورسٹی میں تشدد کے معاملہ کی کرائم برانچ نے تفتیش شروع کردی ہے ۔جہاں ٹیم نے سی سی ٹی وی کیمرے کے فوٹیج کو بھی اپنے قبضہ میں لے لیا ہے، وہیں متعدد سیکورٹی ملازمین ، بی ایچ یو کے پروکٹوریل بورڈ اور وارڈن سمیت تقریبا ایک زیادہ سے زیادہ ملازمین اور 10 سے زیادہ طلبہ و طالبات کو نوٹس جاری کیا گیا ہے۔ نوٹس کے ذریعہ جانچ ٹیم نے واقعہ سے وابستہ معلومات مانگی گئی ہیں۔

اطلاعات کے مطابق لاٹھی چارج کے وقت جائے واقعہ کے آس پاس موجود موبائل کو بھی جانچ کی رڈار پر لےلیا گیا ہے ۔ علاوہ ازیں بی ایچ یو کے نام سے فیس بک پیج بنانے والوں کی بھی پولیس تلاش کررہی ہے۔

بی ایچ یو ہنگامہ : کرائم برانچ نے شروع کی جانچ ، تقریبا ایک درجن طلبہ و طالبات کو نوٹس

ادھر طالبات کے تروینی ہاسٹل کے پاس سے پولیس اہلکاروں کو ہٹالیا گیا ہے۔ وی سی کی رہائش گاہ پر تعینات پی اے سی کو بھی ہٹالیا گیا ہے۔ حالانکہ مہلا ودیالیہ پر سیکورٹی برقرار ہے۔ فی الحال بی ایچ یو میں کشیدگی مگر امن کا ماحول ہے۔ خیال رہے کہ بی ایچ یو میں دو اکتوبر تک چھٹی ہے، جس کے بعد تین اکتوبر کے بعد احتجاج اور تفتیش کی تصویر صاف ہوسکے گی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز