Live Results Assembly Elections 2018

خانوادہ قاسمی کے اہم چشم و چراغ دارالعلوم وقف دیوبند کے صدرالمدرسین مولانا محمد اسلم قاسمی کا انتقال

خانوادہ قاسمی کے اہم چشم وچراغ ،معروف عالم دین مولانا محمد اسلم قاسمی کا آج دیوبند میں انتقال ہوگیا ہے ۔

Nov 13, 2017 06:40 PM IST | Updated on: Nov 13, 2017 06:45 PM IST

دیوبند : خانوادہ قاسمی کے اہم چشم وچراغ ،معروف عالم دین مولانا محمد اسلم قاسمی کا آج دیوبند میں انتقال ہوگیا ہے ۔وہ 87 برس کے تھے ۔ مولانا کافی دنوں سے بیمار چل رہے تھے ۔ آشیانہ قاسمی میں آج سوا بارہ بجے وہ اس دنیا سےرخصت ہوگئے ۔مولانا کے سانحۂ ارتحال پر مرکزی جمعیۃ علماء کے جنرل سکریٹری مولانا فیروز اختر قاسمی نے دلی صدمے کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مولانامرحوم خاندانِ قاسمی کی علمی و فکری اور اخلاقی خوبیوں کے امین تھے اور انھوں نے تقریباً پچاس سال تک دارالعلوم دیوبند ودارالعلوم وقف میں جو علمی خدمات انجام دی ہیں وہ ناقابل فراموش ہیں۔

خیال رہے کہ مولانا محمد اسلم قاسمی کا علمی دنیا میں ایک بڑا اور تاریخی نام تھا،آپ دارالعلوم دیوبند کے بانی مولانا محمد قاسم ناناتوی کے پرپوتے اور دارالعلوم دیوبند کو عالمگیر شہرت دلانے والے سابق مہتمم حکیم الاسلام قاری محمد طیب صاحب کے دوسرے صاحبزادے تھے ۔ مولانا دارالعلوم وقف دیوبند کے صدر مدرس ہونے کے ساتھ وہاں کے مقبول استاذ اور بخاری شریف کی تدریس کابھی فریضہ انجام دے رہے تھے ۔ علمی دنیا میں آپ کی شخصیت بیحد مقبول رہی ہے اور آپ کے ہزاروں شاگرد دنیا بھر میں پھیلے ہوئے ہیں،آپ کے بڑے بھائی مولانا محمد سالم قاسمی ابھی الحمد اللہ بقیدحیات ہیں اور ان کی عمر تقریبا 95 سے تجاوز کرچکی ہے ۔

خانوادہ قاسمی کے اہم چشم و چراغ دارالعلوم وقف دیوبند کے صدرالمدرسین مولانا محمد اسلم قاسمی کا انتقال

مولانا فیروز اختر قاسمی نے کہا کہ حضرت مولانا محمداسلم قاسمی ایک روشن فکر کے حامل اورحالاتِ زمانہ پر نگاہ رکھنے والے عالم دین تھے اور انہوں نے نہ صرف علمِ حدیث کی تدریس کے ذریعہ طالبان علوم نبوت کی خدمت کی بلکہ اس کے ساتھ ساتھ ان کا تصنیفی و تالیفی ذوق بھی نہایت عمدہ تھا ،چنانچہ ان کے قلم سے سیرت و اسلامیات پر مختلف کتابیں نکلیں جنہیں اہل علم کے طبقے میں خاصی پذیرائی حاصل ہوئی۔

انہوں نے کہاکہ مولانا مرحوم اپنی ذاتی زندگی میں ایک بے نفس اور نہایت منکسرالمزاج انسان تھے ۔چنانچہ تمام تر فضل و کمال کے باوجود نہایت سادہ زندگی گزاری اور ہر قسم کے تصنع اور تکلف سے دور رہے۔مولانا قاسمی نے مرحوم کی وفات کی خبر سنتے ہی ان کے پسماندگان سے رابطہ کرکے اظہار تعزیت کیا اور ان کے لئے مغفرت و بلندی درجات کی دعاء کی۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز