اترپردیش شیعہ وقف بورڈ چیئرمین وسیم رضوی کو جان سے مارنے کی دھمکی ، کیس درج ، جانچ شروع

Jan 14, 2018 12:55 PM IST | Updated on: Jan 14, 2018 12:55 PM IST

لکھنو : متنازع بیانات دے کر سرخیوں میں رہ رہے اترپردیش شیعہ سینٹرل وقف کے چیئرمین وسیم رضوی کو انڈر ورلڈ ڈان داود ابراہیم کےمبینہ کارندوں نے جان سے مارنے کی دھمکی دی ہے ۔ اس معاملہ میں وسیم رضوی نے پولیس میں ایک شکایت درج کرائی ہے ۔ رضوی کے مطابق ایک نامعلوم شخص نے ہفتہ کی رات 10 بجے انہیں فون کیا اور خود کو ڈی کمپنی کا کارندہ بتاتے ہوئے بھائی کے نام سے دھمکی دی۔

وسیم رضوی نے نیوز 18 کو بتایا کہ انہیں نیپال سے داود ابراہیم کے کسی آدمی نے فون کیا تھا اور مدارس کے معاملہ میں جاری تنازع کے سلسلہ میں داود کا پیغام دیتے ہوئے دھمکی دی۔ رضوی نے بتایا کہ داود کے حوالے سے انہیں دھمکی دی گئی ہے کہ وہ فورا مولیوں سے معافی مانگیں ، نہیں تو انہیں اور ان کے کنبہ کو دھماکے سے اڑا دیا جائے گا۔

اترپردیش شیعہ وقف بورڈ چیئرمین وسیم رضوی کو جان سے مارنے کی دھمکی ، کیس درج ، جانچ شروع

شیعہ وقف بورڈ چیئرمین وسیم رضوی

دھمکی ملنے کے بعد وسیم رضوی نے شہادت گنج تھانہ میں کیس درج کروایا ہے ۔ فی الحال دھمکی ملنے کے بعد پولیس معاملہ کی جانچ میں مصروف ہوگئی ہے۔ خیال رہے کہ مدارس کو لے کر متنازع بیان دینے کے بعد سے ہی وسیم رضوی چوطرفہ تنقید کی زد پر ہیں۔ وسیم رضوی نے نو جنوری کو وزیر اعظم مودی کو ایک خط لکھ کر مدرسہ تعلیم ختم کرنے کا مطالبہ کیا تھا ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز