دہلی یونیورسٹی طلبہ تنظیم کے الیکشن میں اے بی وی پی کو جھٹکا، صدر سمیت دو عہدوں پر این ایس یو آئی کی جیت

Sep 13, 2017 02:55 PM IST | Updated on: Sep 13, 2017 02:56 PM IST

نئی دہلی۔ دہلی یونیورسیٹی طلبہ تنظیم ( ڈی یو ایس یو) کے انتخابات 2017 میں اے بی وی پی کو زبردست جھٹکا دیتے ہوئے این ایس یو آئی نے صدر سمیت دو عہدوں پر جیت درج کی ہے۔ وہیں، اے بی وی پی کے امیدوار دو عہدوں پر جیتے ہیں۔ این ایس یو آئی کے راکی دسید صدر منتخب کئے گئے ہیں۔ چار سال بعد دہلی یونیورسیٹی میں این ایس یو آئی کا صدر ہو گا۔

دہلی یونیورسٹی طلبہ تنظیم (ڈی یو ایس یو) کے لئے الیکشن منگل کو ہوا تھا۔  یونیورسٹی کے کیمپس میں ووٹنگ پرامن طورپر مکمل ہوئی تھی، جس میں یونیورسٹی سے ملحق کالجوں کے طلبہ و طالبات نے تنظیم کے نئے عہدیداروں کے انتخاب کے لئے ووٹ ڈالے تھے۔

دہلی یونیورسٹی طلبہ تنظیم کے الیکشن میں اے بی وی پی کو جھٹکا، صدر سمیت دو عہدوں پر این ایس یو آئی کی جیت

چار سال بعد دہلی یونیورسیٹی میں این ایس یو آئی کا صدر ہو گا۔

ڈی یو ایس یو کے انتخابات اس بار ای وی ایم سے منعقد کئے گئے تھے، جس میں دو سیشن میں ووٹ ڈالے گئے۔ یومیہ کالجوں کے لئے ووٹنگ ساڑھے آٹھ بجے شروع ہوئی تھی، جو ساڑھے بارہ بجے تک جاری رہی اور شام کے کالجوں کے لئے دوسرے سیشن میں تین بجے سے ووٹنگ شروع ہوئی جو دیر شام سات بجے ختم ہوئی تھی۔ اس بار انتخابات میں صدر کے عہدے کے لئے مختلف تنظیموں سے کل 10 امیدوار میدان میں تھے۔ تاہم، اصل مقابلہ بی جے پی سے وابستہ تنظیم اے بی وی پی اور کانگریس کی طلبہ تنظیم این ایس یو آئي کے درمیان ہی تھا۔

گزشتہ سال کے انتخابات میں طلبہ تنظیم کے چار عہدوں میں سے تین پر اے بی وی پی کے امیدوار کامیاب ہوئے تھے، جبکہ ایک عہدے پر این ایس یو آئی کی جیت ہوئی تھی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز