نوٹ بندی کا ایف آئی آئی پر منفی اثر، 24 سال میں پہلی مرتبہ بیرونی ادارہ جاتی سرمایہ کاری ر ہی منفی

Jan 08, 2017 12:11 PM IST | Updated on: Jan 08, 2017 12:11 PM IST

ممبئی : نوٹ بندی کی وجہ سے غیر ملکی ادارہ جاتی سرمایہ کاروں (ایف آئی آئی) / پورٹفولیو سرمایہ کاروں ( ایف پی آئی ) کا ہندوستانی سرمایہ مارکیٹ میں سالانہ سرمایہ کاری 24 سال میں پہلی بار سال 2016 میں خالص طور پر منفی رہی ہے۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق سال 2016 میں ایف پی آئی/ ایف آئی آئي نے سرمایہ مارکیٹ سے خالص طور پر 319.01 کروڑ ڈالر (23،07970 کروڑ روپے) نکالے ہیں۔

سرمایہ کاروں کی طرف سے لگائے گئے پیسے میں سے نکالے گئے پیسوں کو کم کرکے اس کو خالص سرمایہ کاری شمار کیا جاتا ہے۔ سینٹرل ڈیپازٹری سروسز (انڈیا) لمیٹڈ پر سال 1993 سے اب تک کے اعداد و شمار دستیاب ہیں۔ اس میں سال 2016 ایسا پہلا کیلنڈر سال رہا، جب غیر ملکی ادارہ / پورٹ فولیو سرمایہ کار خالص طور پر پیسہ نکالنے والے رہے ہیں۔ سال 2015 میں ان کی خالص سرمایہ کاری 1،059.64 ملین ڈالر اور سال 2014 میں مودی حکومت کے آنے کے بعد ہونے والے اقتصادی اصلاحات کی امید میں 4،235.90 ملین ڈالر پر رہی تھی۔

نوٹ بندی کا ایف آئی آئی پر منفی اثر، 24 سال میں پہلی مرتبہ بیرونی ادارہ جاتی سرمایہ کاری ر ہی منفی

بیرونی سرمایہ کاروں نے ہندوستانی منڈیوں میں اب تک سب سے زیادہ 7،090.89 ملین ڈالر 2007 میں اور 6،157.10 کروڑ ڈالر 2008 میں لگائے تھے۔ اس کی وجہ یہ تھی کہ اس وقت تقریبا تمام ترقی یافتہ ممالک زبردست اقتصادی بحران کی زد میں تھے اور غیر ملکی سرمایہ کار وہاں سے پیسہ نکال کر یہاں کی سرمایہ مارکیٹ میں لگا رہے تھے۔

گزشتہ سال 12 میں سے سات مہینے ایف پی آئی / ایف آئی آئی نے مارکیٹ سے پیسے نکالے جبکہ دیگر پانچ مہینے وہ خالص طور پر پیسے لگائے ہیں ۔ نوٹ بندي کے اعلان سے پہلے جنوری سے اکتوبر کے درمیان انہوں نے مارکیٹ میں 658.49 کروڑ ڈالر (43،42840 کروڑ روپے) لگائے تھے لیکن، نومبر میں ان سرمایہ کاروں نے 578.60 ملین ڈالر اور دسمبر میں 398.88 ملین ڈالر نکال لیے۔ اس سے پورے سال کے دوران ان کی خالص سرمایہ کاری منفی ہو گئي۔پورے سال میں انہوں نے بازار حصص میں جہاں 316.92 ملین ڈالر لگائے وہیں 635.93 کروڑ ڈالر کے ڈیٹ فروخت کردیئے۔

سال 2017 میں بھی ایف پی آئی منفی بنے ہوئے ہیں۔مہینے کے پہلے ہفتے میں انہوں نے 33.86 کروڑ ڈالر کے حصص فروخت کئے ہیں جبکہ 20.99 کروڑ ڈالر کا ایک ڈیٹ خریدا ہے اس طرح جنوری میں اب تک وہ سرمایہ مارکیٹ سے کل 12.87 کروڑ ڈالر (88043 کروڑ روپے) نکال چکے ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز