سبرت رائے کی عرضی خارج ، چھ فروری تک 600 کروڑ روپے جمع کرانے ہوں گے

سپریم کورٹ نے سہارا گروپ کے سربراہ سبرت رائے کی بقایا رقم جمع کرانے کے لئے اضافی مہلت دینے کی پٹیشن کو مسترد کرتے ہوئے آج کہا کہ انہیں ہر حال میں چھ فروری تک 600 کروڑ روپے جمع کرانے ہوں گے

Jan 12, 2017 10:13 PM IST | Updated on: Jan 12, 2017 10:13 PM IST

نئی دہلی : سپریم کورٹ نے سہارا گروپ کے سربراہ سبرت رائے کی بقایا رقم جمع کرانے کے لئے اضافی مہلت دینے کی پٹیشن کو مسترد کرتے ہوئے آج کہا کہ انہیں ہر حال میں چھ فروری تک 600 کروڑ روپے جمع کرانے ہوں گے ورنہ انہیں دوبارہ جیل بھیج دیا جائے گا۔ جسٹس دیپک مشرا، جسٹس آر کے گوگوئی اور جسٹس ارجن کمار سیکری کی بینچ نے کہا کہ عدالت نے بقایا رقم جمع کرانے کے لئے مسٹر سبرت رائے کو پہلے ہی کافی وقت دے دیا ہے اور اب اگر انہوں نے یہ رقم جمع نہیں کرائی تو انہیں جیل جانا پڑے گا ۔

سہارا گروپ نے عدالت میں اپنی درخواست میں کہا تھا کہ نوٹ بندي کی وجہ سے انہیں یہ رقم جمع کرنے میں مشکل ہو رہی ہے کیونکہ نوٹ بندي کا ریئل اسٹیٹ سیکٹر پر برا اثر پڑا ہے اور اس وجہ سے وہ اپنی جائیداد فروخت نہیں کرپا رہے ہیں۔ سہارا گروپ بیرون ملک میں نیویارک اور لندن میں اپنی املاک بھی بیچ کر رقم جمع کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔

سبرت رائے کی عرضی خارج ، چھ فروری تک 600 کروڑ روپے جمع کرانے ہوں گے

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز