ڈیرہ پیروکاروں کو آختہ کرنے کے معاملے کی سماعت 25 اکتوبر کو

Aug 28, 2017 03:10 PM IST | Updated on: Aug 28, 2017 03:10 PM IST

حصار۔ سادھوی جنسی استحصال معاملے میں پنچکولہ کی سی بی آئی عدالت میں قصوروار قرار دئے گئے ڈیرہ سچا سودا کے سربراہ گرمیت رام رحیم کی مشکلیں ابھی یہیں ختم نہیں ہوں گی۔ اس کے خلاف ڈیرا کے تقریباََ 400ڈیرہ پیروکاروں کو قوت مردمی سے محروم کرنے کے معاملے میں پنجاب اور ہریانہ ہائی کورٹ میں آئندہ 25اکتوبر کو سماعت ہوگی۔

عرضی گذار فتح آباد کے باشندہ ہنس راج چوہان نے آج یہاں یہ اطلاع دی۔ انہوں نے بتایا کہ یہ معاملہ انہوں نے سات جولائی 2012کو ہائی کورٹ میں دائر کیا تھا۔

ڈیرہ پیروکاروں کو آختہ کرنے کے معاملے کی سماعت 25 اکتوبر کو

ڈیرہ سچا سودا سربراہ گرمیت رام رحیم سنگھ: فائل فوٹو۔

انہوں نے بتایا کہ وہ اب تک ڈیرہ کے ذریعہ آختہ کئے گئے 166پیروکاروں کی فہرست عدالت کو سونپ چکے ہیں۔ انہوں نے دعوی کیا کہ ڈیرہ سربراہ کی ہدایت پر ہی ڈیرے کے ڈاکٹروں نے ان لوگوں کو آختہ کیا تھا۔ مسٹر چوہان نے کہا کہ وہ ہائی کورٹ میں 25اکتوبر کو درخواست کریں گے کہ اس معاملے کی فاسٹ ٹریک عدالت میں باقاعدہ سماعت کی جائے جس سے متاثرین کو جلد انصاف مل سکے۔ خیال رہے کہ ڈیرہ کے سربراہ کے خلاف سرسا کے صحافی رام چندر چھترپتی ، ڈیرا کے منیجر رنجیت سنگھ کے قتل اورڈیرہ پیروکاروں کو آختہ کرنے کا معاملہ بھی چل رہا ہے اور ان میں بھی سماعت آخری مرحلہ میں ہے۔

رام چندر چھترپتی نے ہی سادھوی معاملہ کی شکایت کے اس خط کو اپنے اخبار’پورا سچ‘ میں شائع کیا تھا اور اس نے 2002میں اس وقت کے وزیراعظم اٹل بہاری واجپئی ، پنجاب اور ہریانہ ہائی کورٹ کے جج اور دیگر اعلی اداروں کو لکھ کر ڈیرہ میں چل رہی غیراخلاقی حرکتوں کی پول کھولنے کی کوشش کی تھی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز