ڈیجیٹل لین دین کے فروغ کیلئے پچاس ہزار سے زیادہ کی نقد رقم نکالنے پر ٹیکس لگانے کی سفارش

ملک میں ڈیجیٹل لین دین کو فروغ دینے اور کیش لیس معیشت کو فروغ کے مقصد سے 50 ہزار روپے سے زیادہ کی نقد رقم نکالنے پر بینکاری کیش ٹرانزیکشن ٹیکس لگانے اور پوائنٹ آف سیل مشین سے ادائیگی پر لگنے والے مرچنٹ ڈکاُونٹ ریٹ (ایم ڈی آر) کو مکمل طور پر ختم کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔

Jan 24, 2017 10:36 PM IST | Updated on: Jan 24, 2017 10:38 PM IST

نئی دہلی: ملک میں ڈیجیٹل لین دین کو فروغ دینے اور کیش لیس معیشت کو فروغ کے مقصد سے 50 ہزار روپے سے زیادہ کی نقد رقم نکالنے پر بینکاری کیش ٹرانزیکشن ٹیکس لگانے اور پوائنٹ آف سیل مشین سے ادائیگی پر لگنے والے مرچنٹ ڈکاُونٹ ریٹ (ایم ڈی آر) کو مکمل طور پر ختم کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔ نوٹوں کی منسوخی پیش نظر ڈیجیٹل لین دین کو فروغ دینے کے لئے نیتی کمیشن میں آندھرا پردیش کے وزیر اعلی این چندر بابو نائیڈو کی قیادت میں بنی ذیلی کمیٹی نے وزیر اعظم مودی کو اپنی عبوری رپورٹ سونپ دی ہے ، جس میں یہ سفارشات کی گئی ہے۔

مسٹر نائیڈو نے رپورٹ سونپنے کے بعد آج رات یہاں نامہ نگاروں سے کہا کہ 50 ہزار روپے سے زیادہ کی نقد رقم نکالنے پر ٹیکس لگانے کا مشورہ دیا گیا ہے۔اس کے ساتھ ہی ایم ڈی آر کو پوری طرح سے ختم کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔ سرکاری ایجنسیوں میں ڈیجیٹل لین دین پر ایم ڈی آرکو صفر یا کم سطح پر لانے کے لئے کہا گیا ہے۔

ڈیجیٹل لین دین کے فروغ کیلئے پچاس ہزار سے زیادہ کی نقد رقم نکالنے پر ٹیکس لگانے کی سفارش

مسٹر نائیڈو نے کہا کہ ایم ڈی آر کو ختم کرنے کے لئے کمیٹی کی رپورٹ ریزرو بینک کو بھی سونپی جائے گی، کیونکہ یہ کام مرکزی بینک کو ہی کرنا ہے۔ سال 2005 میں یو پی اے حکومت نے 25 ہزار روپے سے زیادہ کی نقد رقم نکالنے پر آمدنی حاصل کرنے کے مقصد سے ٹیکس لگانا چاہتی تھی لیکن اس وقت ڈیجیٹل لین دین کے لئے انفراسٹرکچر تیار نہیں تھا۔ اب ہندوستان دنیا میں ایک محض ایسا ملک ہے جس کے پاس آدھار پر مبنی بایومیٹرک شناخت کی سہولت اور اس کے ذریعہ ہونے والا لین دین سب سے محفوظ ہے۔ اس کے باوجود ڈیجیٹل لین دین کو محفوظ کرنے کے لئے ہر لین دین کا انشورنس کرنے کی سفارش بھی کی گئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ بڑے لین دین میں نقد رقم کی زیادہ سے زیادہ حد مقرر کرنے کی سفارش کی گئی ہے، تاہم کمیٹی نے سالانہ آمدنی میں سے مقرر رقم کی ڈیجیٹل لین دین کے ذریعے استعمال کرنے پر ٹیکس میں چھوٹ دینے پر بھی غور کرنے کی درخواست کی ہے۔ اس کے علاوہ ڈیجیٹل ادائیگی قبول کرنے والے کاروباریوں سے گزشتہ برسوں کے بارے میں کسی طرح کی پوچھ گچھ نہیں کئے جانے کی بھی سفارش کی گئی ہے۔

Loading...

انہوں نے کہا کہ شہری اور دیہی کوآپریٹیو بینکوں کو بھی ڈیجیٹل لین دین میں فوری طورپر شامل کرنے کا مشورہ دیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی یوپی آئی اپلی کیشن کے لئے کیو آر کو کوڈ پر مبنی بنانے کی بات کہی گئی ہے اور بینکوں سے بھی مرچنٹ سطح پرکیو آر کوڈ کی بنیاد پر ادائیگی کو فروغ دینے کے لئے کہا گیا ہے۔ آندھرا پردیش کے وزیر اعلی نے کہا کہ بڑے شہروں میں بسوں اور ٹرینوں میں سفر کے دوران کرایہ کی ادائیگی کے لئے کانٹیکٹ لیس ادائیگی کو فروغ دینے کی سفارش کی ہے۔ اس کے ساتھ ہی ملک کے تمام 1.54 لاکھ ڈاک گھروں کو آدھار پر مبنی مائیکرو اے ٹی ایم لگانے، تمام ادائیگی بینکوں اور بزنس کراسپونڈینٹوں کو اے ای پی ایس کے ذریعے انٹرپورٹیبل کرنے، انکم ٹیکس نہ دینے والے چھوٹے دکانداروں کو ڈیجیٹل ادائیگی کے لئے اسمارٹ فون خریدنے کے لئے ایک ہزار روپے کی سبسڈی دینے اور آدھار پر مبنی ادائیگی کے لئے بایومیٹرک مشین خریدنے کے لئے خریداروں کو 50 فیصد سبسڈی دینے کی سفارش کی گئی ہے۔

مسٹر نائیڈو نے کہا کہ ابھی کیش ٹرانزیکشن کے مقابلے میں ڈیجیٹل ادائیگی مہنگی ہے اور اس کو دور کرکے اس کی حوصلہ افزائی کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ معاشرے کے تمام طبقات کو ڈیجیٹل لین دین کے لئے حوصلہ افزائی کرنے کے ساتھ ہی عالمی معیار کی بنیاد پر جدید ڈیجیٹل ادائیگی کے طریقہ کار بنانے کی سفارش کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ڈیجیٹل ادائیگی کے معاملے میں ہندستان اب دنیا میں سب سے نچلے پائیدان پر ہے جبکہ سنگاپور اس معاملے میں اول ہے۔

انہوں نے کہا کہ لیس کیش معیشت اور ڈیجیٹل لین دین کے تئیں لوگوں کے نظریہ میں تبدیلی لانے کی ضرورت ہے۔ اس کے ساتھ ہی اس طرح سے ادائیگی کو قبول کرنے کے انفراسٹرکچر بنانے، کنیکٹوٹی اور ڈیٹا انفراسٹرکچر کو فروغ دینے ، فنٹیک کے ساتھ سائبر سیکورٹی کو مضبوط بنانے کی ضرورت بتائی گئی ہے۔ اس موقع پر نیتی کمیشن کے نائب صدر اگروند پنگڈھیا اور چیف ایگزیکٹو آفیسر امیتابھ کانت بھی موجود تھے۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز