دگ وجے سنگھ کا جوابی حملہ، منوہر پاریکر کو 'اقتدار کا بھوکا' قرار دیا

Apr 01, 2017 05:28 PM IST | Updated on: Apr 01, 2017 05:28 PM IST

نئی دہلی۔  کانگریس کے سینئر لیڈر دگ وجے سنگھ نے گوا کے وزیر اعلی منوہر پاریکرکے کل راجیہ سبھا میں ان پر کئے گئے طنز پر جوابی حملہ کرتے ہوئے آج انہیں، 'اقتدار کا بھوکا' قرار دیا۔ گوا کا وزیر اعلی بننے کے بعد پہلی بار راجیہ سبھا آئے مسٹر پاریکر نے کل مسٹر سنگھ کو 'شکریہ' دیتے ہوئے طنز کیا تھا، ' آپ گوا میں گھومتے رہے اور ہم نے حکومت بنا لی۔ ' کانگریس جنرل سکریٹری نے ٹوئٹ کرکے مسٹر پاریکر پر جوابی حملہ کیا، "مسٹر پاریکر آپ کو اقتدار کی بھوک کے لئے شرم آنی چاہئے۔ آپ نے گوا کے لوگوں کو دھوکہ دیا ہے۔ ان سے معافی مانگیں۔ " دوسرے ٹوئٹ میں انہوں نے لکھا، "مسٹر پاریکر نے گوا میں حکومت بنانے دینے کے لئے میرا شکریہ ادا کیا ہے لیکن اگر انہیں شکریہ کرنا ہے تو وہ نتن گڈکری کا کریں جنہوں نے 12 مارچ کی صبح گوا میں ممبران اسمبلی کی خرید فروخت کی۔

مسٹر دگوجے سنگھ نے آئین، سرکاری کمیشن کی ہدایات اور سپریم کورٹ کے احکامات کی خلاف ورزی کرنے کے لئے گوا کی گورنر مردلا سنہا کو بھی نشانہ بنایا۔ کانگریس کے سینئر لیڈر نے کہا کہ بی جے پی لیڈروں کے اس مبینہ نظام کے سبب گوا کے لوگوں کی تائید چھن گئی۔ خیال ر ہے کہ اسمبلی انتخابات کے نتائج میں اکثریت نہیں ملنے کے باوجود بی جے پی گوا میں اتحاد کی حکومت بنانے میں کامیاب رہی۔ کانگریس کو ریاست میں سب سے زیادہ سیٹیں ملی تھیں ۔اگر چہ اسے اکثریت نہیں ملی لیکن وہ سب سے بڑی پارٹی کے طور پر ابھری تھی۔

دگ وجے سنگھ کا جوابی حملہ، منوہر پاریکر کو 'اقتدار کا بھوکا' قرار دیا

دگوجے سنگھ، منوہر پاریکر: فائل فوٹو

وزیر اعلی بننے کے بعد مسٹر پاریکر نے وزیر دفاع کے عہدے سے استعفی دے دیا تھا لیکن وہ اب بھی راجیہ سبھا کے رکن ہیں۔ جب وہ کل وقفہ صفر کے دوران ایوان میں آئے تو مسٹر سنگھ کی قیادت میں کانگریس کے اراکین نے ان کی سخت مخالفت کرتے ہوئے ان پر 'گوا میں جمہوریت کا قتل' کا الزام لگایا۔ اس پر مسٹر پاریکر نے مسٹر سنگھ پر طنز کرتے ہوئے کہا، "شکریہ آپ کی ناکامی کے سبب ہم گوا میں حکومت بنانے میں کامیاب رہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز