احمد پٹیل کے حق میں دگ وجے سنگھ کی واگھیلا سے ووٹ ڈالنے کی اپیل ناکام

Aug 08, 2017 02:34 PM IST | Updated on: Aug 08, 2017 02:34 PM IST

نئی دہلی۔  کانگریس کے جنرل سکریٹری اور مدھیہ پردیش کے سابق وزیر اعلی دگ وجے سنگھ کی گجرات میں پارٹی کے مستعفی لیڈر شنکر سنگھ واگھیلا سے ’راجپوت بھائی‘ کی راجیہ سبھا انتخاب میں کانگریس کے امیدوار احمد پٹیل کو ووٹ دینے کی اپیل کام نہیں آئی۔ واگھیلا نے ووٹ ڈالنے کے بعد کہا کہ انہوں نے مسٹر پٹیل کو ووٹ نہیں دیا ہے۔ مسٹر سنگھ نے راجیہ سبھا کی گجرات سے تین سیٹوں کے لئے ہونے والی پولنگ سے ٹھیک پہلے آج صبح تین ٹویٹ کئے۔ انہوں نے واگھیلا سے پارٹی اور بھائی چارے کی لائن سے آگے جاکر بھی نسل کی لائن پر اپنا ووٹ مسٹر پٹیل کو دینے کی اپیل کی تھی۔ مسٹر سنگھ نے ٹویٹ میں کہا کہ میری آپ سے ایک شخص اور بھائی کے طور پر اپیل۔ انہوں نے اس ٹویٹ میں مسٹر واگھیلا سے کھجوراہو کا کوئی واقعہ بھی یاد دلانے کی بات کہی ہے۔ مسٹر سنگھ خود راجپوت ہیں اور انہوں نے مسٹر پٹیل کے حق میں ووٹ کرنے کے لیے مسٹر واگھیلا کو ان کی  ذات (راجپوت) بھی یاد دلائی ۔

دوسرے ٹویٹ میں کانگریس کے سینئر لیڈر نے لکھا ’’یہ مت بھوليے کہ کانگریس نے آپ کے لیے کیا کیا ہے، آپ راجپوت ہیں، براہ مہربانی احمد بھائی کی جیت یقینی بنائیں، وہ ہمارے دوست اور حامی ہیں‘‘۔ تیسری ٹویٹس میں مسٹر سنگھ نے مسٹر واگھیلا کو ان کے پرانے شاگرد کی بھی یاد دلائی ہے۔ کانگریس کے سینئر لیڈر نے لکھا ہے کہ کانگریس کے ساتھ مسٹر واگھیلا جی آپ کے جو بھی مسائل ہیں ان کا حل پارٹی کے اندر کر لیا جائے گا۔ دھوکہ مت دیجئے اور نہ ہی اپنے پرانے شاگرد کو سپورٹ کیجئے جو پورے ملک کو اپنے حساب سے هانكے جا رہا ہے۔ تیسرے ٹویٹس میں مسٹر سنگھ کا اشارہ شاید وزیر اعظم نریندر مودی کی طرف ہے۔

احمد پٹیل کے حق میں دگ وجے سنگھ کی واگھیلا سے ووٹ ڈالنے کی اپیل ناکام

کانگریس کے سینئر لیڈر دگ وجے سنگھ: فائل فوٹو۔

کانگریس جنرل سکریٹری کی اس اپیل کے باوجود مسٹر واگھیلا نے ووٹ ڈالنے کے بعد کہا کہ انہوں نے مسٹر پٹیل کو ووٹ نہیں دیا ہے۔ مسٹر واگھیلا نے کہا کہ کانگریس کو یقین نہیں تھا۔ احمد پٹیل کی ساکھ سے پارٹی کو مذاق نہیں کرنا چاہیئے تھا۔ راجیہ سبھا کی گجرات سے تین سیٹوں کے انتخابات میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے صدر امت شاہ، وزیر اطلاعات و نشریات اسمرتی ایرانی اور کانگریس چھوڑنے والے ممبر اسمبلی بلونت سنگھ راجپوت امیدوار ہیں۔ انتخاب سے پہلے کانگریس میں خاصی اتھل پتھل ہوئی ہے۔ مسٹر واگھیلا نے حزب اختلاف کے رہنما کے عہدے سے استعفی دے دیا۔ اس کے علاوہ پارٹی کے چھ اور ممبران اسمبلی نے استعفی دیا۔ پارٹی کو مزید ٹوٹ سے بچانے کیلئے کانگریس اپنے 44 ممبران اسمبلی کو بنگلور کے ریزورٹ میں لے گئی تھی اور اتوار کو ہی انہیں واپس گجرات لایا گیا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز