ڈاکٹر اے پی جے عبدالکلام کی 86 ویں یوم پیدائش پر اہل وطن کا انوکھا تحفہ

نئی دہلی۔ نئے ہندوستان کی تعمیر کیلئے نوجوان طبقہ کو تحریک دینے والے مرحوم صدر جمہوریہ ڈاکٹر اے پی جے عبدالکلام کو ایک لاکھ سے زائد لوگوں نے پرکشش اور رنگ برنگے پوسٹ کارڈوں پر پینٹنگ کے ذریعہ خراج عقیدت پیش کیا ہے۔

Oct 15, 2017 03:32 PM IST | Updated on: Oct 15, 2017 03:33 PM IST

نئی دہلی۔ نئے ہندوستان کی تعمیر کیلئے نوجوان طبقہ کو تحریک دینے والے مرحوم صدر جمہوریہ ڈاکٹر اے پی جے عبدالکلام کو ایک لاکھ سے زائد لوگوں نے پرکشش اور رنگ برنگے پوسٹ کارڈوں پر پینٹنگ کے ذریعہ خراج عقیدت پیش کیا ہے۔ ڈاکٹر کلام کی 86ویں یوم پیدائش پر ان پوسٹ کارڈوں میں 214بہترین پوسٹ کارڈوں کی ایک انوکھی کتاب-’ڈریم مشن‘ کے نام سے شائع کی گئی ہے جس کا آج آن لائن اجرا پڈو چیری کی گورنر کرن بیدی اور مشہور کرکٹر متالی راج نے کیا۔ اس کتاب کا دیباچہ مسز کرن بیدی نے لکھا ہے۔

گزشتہ دوسال سے ’لیٹر فارمز‘ نامی تنظیم پوسٹ کارڈ کے ذریعہ ڈاکٹر کلام کی خدمات کو اجاگر کرنے کیلئے ایک مہم چلا رہی ہے جس کے تحت ملک کے مختلف حصوں سے ہر ہفتہ ہزار وں پوسٹ کارڈ مذکورہ تنظیم کو مل رہے ہیں۔ ان پوسٹ کارڈوں پر بچوں ،بوڑھوں اور خواتین سے لیکر سبھی طبقہ اور مذاہب و زبانوں کے لوگوں نے ڈاکٹر کلام کےلئے اپنے جذبات کا اظہار کیا ہے۔ مذکورہ تنظیم کے پروگرام ڈائرکٹر زوبی جان نے بتایا کہ ہندی، انگریزی،ملیالم،اردو اور پنجابی سمیت کئی زبانوں میں لوگوں نے ڈاکٹر کلام کے خوابوں کا ہندوستان بنانے کیلئے پوسٹ کارڈ پر اپنے اپنے جذبات و احساسات کو تخلیقی انداز میں واضح کیا ہے۔ ان ایک لاکھ سے زائد پوسٹ کارڈوں میں سے 214پوسٹ کارڈوں کا انتخاب کر کے انہیں ’ڈریم مشن‘ نامی کتابی شکل میں شائع کیا گیا ہے۔

ڈاکٹر اے پی جے عبدالکلام کی 86 ویں یوم پیدائش پر اہل وطن کا انوکھا تحفہ

گزشتہ دوسال سے ’لیٹر فارمز‘ نامی تنظیم پوسٹ کارڈ کے ذریعہ ڈاکٹر کلام کی خدمات کو اجاگر کرنے کیلئے ایک مہم چلا رہی ہے جس کے تحت ملک کے مختلف حصوں سے ہر ہفتہ ہزار وں پوسٹ کارڈ مذکورہ تنظیم کو مل رہے ہیں۔

اس کتاب کے چار باب ہیں جن میں سب کو تعلیم، خواتین کو خود کفیل،ماحولیات،بچہ مزدوری،سوچھ بھارت،جی ڈی پی ،ندیوں کو جوڑنے اور بے گھروں کو گھر دینے جیسے موضوعات پر لوگوں نے اپنے جذبات کو تصویروں اور نعروں کے ذریعہ اظہار کیا ہے۔ کتاب میں ڈاکٹر کلام کے مشہور اقوال کو تھیم بنایا گیا ہے،جن میں یہ شامل ہیں-’آپ تب تک خواب دیکھیں ،جب تک آپ کے خواب پورے نہیں ہوجاتے‘،’خواب وہ نہیں ہے ،جو آپ نیند میں دیکھتے ہیں بلکہ خواب وہ ہے جو آپ کو سونے نہیں دیتا ہے‘،’خواب خیالات میں تبدیل ہوتا ہے اور خیالات کام میں تبدیل ہوتے ہیں‘۔ اس کتاب کا آخری باب ’خوابوں کی پرواز‘ ہے جس میں ڈاکٹر کلام کے اقوال بھی شامل ہیں جس میں انہو ں نے کہا-’بڑے خواب دیکھنے والوں کے بڑے خواب پورے ہوجاتے ہیں‘۔

مسٹر جان نے بتایا کہ ان کی تنظیم نے گزشتہ سال ڈاکٹر کلام کی برسی پر 24جولائی کو ’ڈیئر کلام ‘نامی کتاب شائع کی تھی جسے معروف انگریزی مصنف ڈاکٹر ششی تھرور اور صنعت کار نارائن مورتی نے جاری کیا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ پوسٹ باکس نمبر-1683،ڈیئر کلام کیئر آف لیٹر فارمز نامی پتہ پر کوئی بھی شخص پوسٹ کارڈ بھیج کر ڈاکٹر کلام کے تئیں اپنے جذبات کا اظہار کرسکتا ہے اور اس طرح ان کے نئے ہندوستان کے خوابوں کو پورا کرنے میں اپنا رول ادا کرسکتا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز