گورکھپور: ڈاکٹر کفیل خان کے بھائی کو بائیک سوار بدمعاشوں نے ماری گولی

گورکھپور بی آر ڈی میڈیکل کالج حادثے میں ملزم ڈاکٹر کفیل خان کے چھوٹے بھائی کاشف پر دو نامعلوم افراد نے اتوار کو دیر رات جان لیوا حملہ کر دیا۔

Jun 11, 2018 09:58 AM IST | Updated on: Jun 11, 2018 09:58 AM IST

گورکھپور بی آر ڈی میڈیکل کالج حادثے میں ملزم  ڈاکٹر کفیل خان کے چھوٹے بھائی کاشف پر دو نامعلوم افراد نے اتوار کو دیر رات جان لیوا حملہ کر دیا۔ کہا جا رہا ہے کہ کاشف کو تین گولیاں ماری گئیں جس کے بعد انہیں سنگین حالت میں ایک نجی اسپتال میں داخل کرایا گیا۔

یہ واقعہ کوتوالی پولیس اسٹیشن کے جے پی اسپتال کے قریب پیش آیا۔ زخمی کاشف کے بھائی عادل نے بتایا کہ گھر لوٹتے وقت اسکوٹی سوار دو بدمعاشوں نے ان کے بھائی پر تابڑ توڑ فائرنگ کر دی۔ اس دوران انہیں تین گولیاں لگیں۔ وہیں، کوتوال دھنشیام تیواری نے کسی پرانی رنجش میں گولی مارے جانے کا اندیشہ ظاہر کیا ہے۔ کوتوال نے کہا ہے کہ تحریر ملنے پر کیس درج کر کے آگے کی کارروائی کی جائے گی۔

گورکھپور: ڈاکٹر کفیل خان کے بھائی کو بائیک سوار بدمعاشوں نے ماری گولی

یہ واقعہ کوتوالی پولیس اسٹیشن کے جے پی اسپتال کے قریب پیش آیا۔

اس واقعہ کے بعد ایک ویڈیو بھی سامنے آیا ہے جس میں زخمی کاشف کا میڈیکل کرانے کو لے کر ڈاکٹر کفیل اور سرکل آفیسر (سی او) پروین سنگھ کے بیچ نوک جھونک ہوتی نظر آ رہی ہے۔ پولیس اہلکاروں کی مداخلت سے کاشف کوعلاج کے لئے میڈیکل کالج ریفر کیا گیا۔ حالانکہ ڈاکٹر کفیل زبردستی اپنے بھائی کو نجی اسپتال لے کر چلے گئے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز