ڈاکٹر ظفرالاسلام کا وزیر اعظم کو خط : مدارس پر وسیم رضوی کے الزامات غلط ، آج تک نہیں ملا کوئی ثبوت

Jan 14, 2018 05:37 PM IST | Updated on: Jan 14, 2018 05:51 PM IST

نئی دہلی: شیعہ وقف بورڈ اتر پردیش کے چیرمین وسیم رضوی کے وزیر اعظم نریندر مودی کو لکھے گئے خط کا نوٹس لیتے ہوئے صدر دہلی اقلیتی کمیشن ڈاکٹر ظفرالاسلام خان نے وزیر اعظم کو خط لکھ کر کہا ہے کہ مسٹر وسیم رضوی کے مدارس پر دہشت گردی کے الزامات پوری طرح سے بے بنیاد ہیں اور آج تک اس کا کوئی ثبوت نہیں فراہم ہوا ہے۔

ڈاکٹر ظفرالاسلام خان نے وزیر اعظم کے نام اپنے خط میں مزید لکھا کہ مدارس مسلمانوں کی دینی ضروریات کا حصہ ہیں لیکن ان میں ایسی تبدیلی آنی چاہئے کہ وہ فارغین مدارس کو دنیا سے بھی جڑ سکیں۔

ڈاکٹر ظفرالاسلام کا وزیر اعظم کو خط : مدارس پر وسیم رضوی کے الزامات غلط ، آج تک نہیں ملا کوئی ثبوت

دلی اقلیتی کمیشن کے صدر ڈاکٹر ظفرالاسلام خان: فائل فوٹو۔

انہوں نے وزیر اعظم کو مشورہ دیا کہ سنٹرل مدرسہ بورڈ کے منصوبے کا احیاء ہونا چاہئے، مدارس کا اس سے الحاق پوری طرح سے رضاکارانہ ہونا چاہئے اور مدارس کو اپنے نصاب میں عصری علوم کو بھی جگہ دینی چاہئے۔ ایسا ہو جانے پر حکومت کو مدارس کی ڈگریاں تسلیم کرنی چاہئے تاکہ مدارس کے فارغین بھی دنیا کے مختلف امکانات سے مستفید ہو سکیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز