اقلیتی طلبہ کیلئے اسکالر شپ کی شرط میں رعایت کیلئے دہلی اقلیتی کمیشن نے مختار عباس نقوی کو لکھا خط

Sep 28, 2017 07:20 PM IST | Updated on: Sep 28, 2017 07:20 PM IST

نئی دہلی : دہلی اقلیتی کمیشن نے ا قلیتی فرقہ کے طلبہ کو اسکالرشپ فارم پر کرنے میں درپیش کئی پریشانیوں کی طرف اقلیتی امور کے مرکزی وزیر مختار عباس نقوی کی توجہ مبذول کراتے ہوئے ان سے فار م پر کرنے کے بعض شرائط کوختم کرنے کی درخواست کی ہے۔ دہلی اقلیتی کمیشن ڈاکٹر ظفرالاسلام خان کی طرف سے آج یہاں جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ مرکز اور دہلی صوبائی حکومت کی جانب سے اقلیتوں کو دی جانے والی اسکالر شپ اسکیموں میں اس سال بہت کم درخواستیں آرہی ہیں۔ اس کی ایک وجہ درخواست دہندہ کو ایس ڈی ایم سے تصدیق شدہ آمدنی سرٹیفکٹ پیش کرنے کی شرط ہے جو کہ غریب لوگوں کے لئے بہت مشکل ہے۔

اس سلسلے میں مستقل شکایت آنے کی وجہ سے دہلی اقلیتی کمیشن نے صوبائی ایس سی ؍ایس ٹی؍ اوبی سی؍ مائیناریٹیز ڈیپارٹمنٹ کو خط لکھا کہ اس شرط کو ختم کیا جائے اور ذاتی تصدیق (سیلف اٹسٹیشن) کا نظام بحال کیا جائے۔ مسٹر خان کا کہنا ہے کہ صوبائی حکومت کے مذکورہ ڈیپارٹمنٹ نے جواب دیا ہے کہ اس شرط کو مرکزی وزارت اقلیتی امور کی ہدایت پر داخل کیا گیا ہے، اس لئے اس کو نہیں بدلا جاسکتا ہے۔

اقلیتی طلبہ کیلئے اسکالر شپ کی شرط میں رعایت کیلئے دہلی اقلیتی کمیشن نے مختار عباس نقوی کو لکھا خط

دلی اقلیتی کمیشن کے صدر ڈاکٹر ظفرالاسلام خان: فائل فوٹو۔

صدر دہلی اقلیتی کمیشن ڈاکٹر ظفرالاسلام خان نے مرکزی وزیر اقلیتی امور مختار عباس نقوی کو خط لکھا ہے کہ اس سال اسکالر شپ کی درخواستوں کے بہت کم ہونے کی وجہ دراصل ایس ڈی ایم سے والدین کی آمدنی کا سرٹیفکٹ حاصل کرنے کی شرط ہے۔ انہوں نے مرکزی وزیر اقلیتی امور سے درخواست کی ہے کہ اس شرط کو ختم کر دیا جائے اور ذاتی تصدیق کے پرانے نظام کو بحال کیا جائے تاکہ غریب طلبہ کو پیش آنے والی دشواری کا ازالہ ہوسکے۔

مرکزی حکومت کی اقلیتوں کے لئے اسکالر شپ کی سہولت کا وقت 30ستمبر کو ختم ہوجائے گا ۔ ڈاکٹر ظفرالاسلام نے اقلیتوں سے اپیل کی ہے کہ جلد از جلد آن لائن درخواست دے کر اس سہولت سے فائدہ اٹھائیں۔ کم درخواستوں کے آنے کی صورت میں یہ اسکیم اگلے سال بند ہوسکتی ہے۔ اسکیم کی تفاصیل مرکزی وزارت اقلیتی امور کی ویب سائٹ پر دیکھی جاسکتی ہیں۔ دہلی حکومت کی طرف سے بھی اسکالر شپ ، فیس کی واپسی اور اسٹیشنری کے لئے مدد ملتی ہے۔لیکن ابھی اس سال کی آخری تاریخ کا اعلان نہیں ہوا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز