معروف اسکالر ڈاکٹر ذاکر نائک کا پاسپورٹ رد کرنے کی کارروائی شروع

Jul 13, 2017 11:35 PM IST | Updated on: Jul 13, 2017 11:35 PM IST

نئی دہلی: حکومت نے معروف اسلامی اسکالر ڈاکٹر ذاکر نائک کا پاسپورٹ رد کرنے کی کارروائی شروع کردی ہے۔ وزار ت خارجہ کے ترجمان گوپال باگلے نے آج یہاں بتایا کہ ٹیلی ویژن کے اسلامی اسکالر ذاکر نائک کو بیرونی ممالک کے سفر سے روکنے کے لئے ان کا پاسپورٹ رد کرنے کی کارروائی شروع کردی گئی ہے۔

مسٹر گوپال باگلے نے آج یہاں صحافیوں کو بتایا کہ قومی تفتیشی ایجنسی (این آئي اے) کی درخواست پر وزارت خارجہ کی طرف سے یہ اقدام شروع کیا گیا ہے۔ این آئي اے مسٹر ذاکر نائک کی ان تقاریر اور بیانات کی چھان بین کررہی ہے، جن سے مبینہ طورپر نوجوانوں کو دہشت گردانہ کارروائیوں ملوث ہونے کی شہہ ملی ہے۔

معروف اسکالر ڈاکٹر ذاکر نائک کا پاسپورٹ رد کرنے کی کارروائی شروع

ممبئی کے علاقائی پاسپورٹ آفس کی طرف سے رواں ماہ کے آغاز میں خط لکھ کر انہيں دس دنوں کے اندر اپنا پاسپورٹ جمع کرنے کی ہدایت دی گئی تھی۔ان کا پاسپورٹ 20 جنوری 2016 کو جاری کیا گيا ہے۔ پاسپورٹ محکمہ کے حکام کا کہنا ہے کہ مسٹر ذاکر نائک کے پاسپورٹ جمع نہ کرنے پر حکومت ان کے خلاف پاسپورٹ ایکٹ 1967 کے تحت کارروائی کر ے گی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز