جنس تبدیل کرنے والے جہاز راں منیش گری کو بحریہ نے کیا برخاست

Oct 10, 2017 08:28 AM IST | Updated on: Oct 10, 2017 08:28 AM IST

نئی دہلی۔  بحریہ نے سروس میں رہتے ہوئے قوانین کی خلاف ورزی کر کے جنس تبدیلی کروانے والے جہاز راں منیش گری کو برخاست کر دیا۔ بحریہ کے مطابق اس جہاز راں نے چھٹی پر رہتے ہوئے ایک نجی ہسپتال میں اپنا جنس تبدیل کروایا تھا۔ اس کی اطلاع ملنے کے بعد بحریہ نے سروس شرائط کے ’سروس کی ضرورت نہیں‘ نامی آرٹیکل کا استعمال کرتے ہوئے اسے برخاست کرنے کی سفارش کی جسے وزارت دفاع نے اپنی منظوری دے دی ہے۔

بحریہ کا کہنا ہے کہ منیش گری کو مرد کے طور پر جہاز راں کے عہدے پر بھرتی کیا گیا تھا لیکن اس نے اپنا جنس تبدیل کرا لیا ہے جو قوانین کے خلاف ہے اور بحریہ کو اب اس کی خدمت کی ضرورت نہیں ہے۔ منیش سات سال پہلے جہاز راں کے عہدے پر بھرتی ہوا تھا۔ اسے برخاست ہونے کے بعد کوئی پنشن اور بھتے نہیں ملیں گے کیونکہ 15 سال کی خدمت اس کے لئے ضروری ہے۔

جنس تبدیل کرنے والے جہاز راں منیش گری کو بحریہ نے کیا برخاست

قابل ذکر ہے کہ فوج کے تینوں بازو میں خواتین کی بھرتی صرف افسر کے عہدے پر کی جاتی ہے، جوان کے طور پر خواتین کی بھرتی نہیں کی جاتی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز