ایس پی ، بی ایس پی اور پیس پارٹی کے امیدواروں کے خلاف الیکشن کمیشن نے دیا ایف آئی آر کا حکم

بی ایس پی کے عتیق احمد سیفی، سماجوادی پارٹی کے اتل گرگ اور پیس پارٹی کے راکیش والمیکی کے خلاف ایف آئی آر درج کرانے ، نوٹس جاری کرنے اور قانونی کارروائی کرنے کا حکم دیا گیا ہے

Feb 24, 2017 02:30 PM IST | Updated on: Feb 24, 2017 02:30 PM IST

لکھنو : مرکزی الیکشن کمیشن نے اتر پردیش کے چیف الیکشن افسر کو بی ایس پی کے عتیق احمد سیفی، سماجوادی پارٹی کے اتل گرگ اور پیس پارٹی کے راکیش والمیکی کے خلاف ایف آئی آر درج کرانے ، نوٹس جاری کرنے اور قانونی کارروائی کرنے کا حکم دیا ہے۔

ان تینوں کو ایک نجی چینل کے ایک اسٹنگ میں ووٹروں کو لبھانے ، انتخابی اخراجات کو کم بتانے اور بوتھ پر قبضہ کرنے کی بات کرتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔

ایس پی ، بی ایس پی اور پیس پارٹی کے امیدواروں کے خلاف الیکشن کمیشن نے دیا ایف آئی آر کا حکم

کمیشن کے چیف سکریٹری کی جانب سے اترپردیش کے چیف الیکشن افسر کو بھیجے گئے خط کے مطابق 22 فروری کو ایک چینل نے کیش فار ووٹ اسکینڈل 2017 کے نام سے اسٹنگ آپریشن دکھایا تھا،جس میں موجودہ اسمبلی انتخابات میں مرادآباد سے بی ایس پی کے امیدوار عتیق احمد سیفی، آگرہ شمال سے ایس پی کے امیدوار اتل گرگ اور آگرہ کینٹ سے پیس پارٹی کےامیدوار راکیش والمیکی کو ووٹروں کو لبھانے ، انتخابی اخراجات کو کم ظاہر کرنے کے ساتھ ہی ساتھ بوتھ پر قبضہ کرنے تک کی بات کرتے دکھایا گیا تھا۔

معاملہ میں الیکشن کمیشن نے ان امیدواروں کو نوٹس بھیجنے کی ہدایت دی ہے۔ ساتھ ہی ساتھ ان امیدواروں کے خلاف ایف آئی آر درج کرانے کی بھی ہدایت دی گئی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز