یوپی میں تعلیم پرچڑھا بھگوا رنگ ! ٹفن میں انڈے یا گوشت کی کوئی بھی ڈش ملی ، تو ہوگی کارروائی ، طلبہ کے داڑھی رکھنے پر بھی پابندی

اسکول میں پڑھنے والے اقلیتی بچوں اور ان کے والدین نے الزام لگایا ہے کہ تعلیم جیسے بنیادی حق پر بھی بھگوا رنگ چڑھانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

Apr 28, 2017 03:25 PM IST | Updated on: Apr 28, 2017 03:33 PM IST

میرٹھ: اترپردیش کے ضلع میرٹھ میں سی بی ایس ای سے ملحقہ اسکول ریشبھ اکیڈمی نے نہ صرف اپنے طالب علموں کو وزیر اعلی آدتیہ ناتھ یوگی جیسے بال رکھنے بلکہ ٹفن میں نان ویج یعنی انڈے، آملیٹ یا گوشت کی کوئی بھی ڈش لانے والوں کو اسکول سے نکال دینے اور ان خلاف قانونی کارروائی کئے جانے کے بھی احکامات دیئے ہیں۔

اس بات پر اسکول میں پڑھنے والے اقلیتی بچوں اور ان کے والدین نے الزام لگایا ہے کہ تعلیم جیسے بنیادی حق پر بھی بھگوا رنگ چڑھانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ یہ اسکول کی آمریت پسندی ہے اور بچوں کو ان کی پسند کا کھانا لانے پر روک لگا کر کھانے پینے کی آزادی جیسے بنیادی حقوق سے انہیں محروم کیا جا رہا ہے۔ والدین نے یہ بھی الزام لگایا کہ اسکول انتظامیہ خاص طبقے کے بچوں کو نشانہ بناتے ہوئے انہیں داخلہ نہیں دینا چاہتی ہے اور اسی وجہ سے پابندی کے ایسے ہتھکنڈے اپنائے جا رہے ہیں۔

یوپی میں تعلیم پرچڑھا بھگوا رنگ ! ٹفن میں انڈے یا گوشت کی کوئی بھی ڈش ملی ، تو  ہوگی کارروائی ، طلبہ کے داڑھی رکھنے پر بھی پابندی

photo : ANI

اس معاملے میں متعلقہ اسکول انتظامیہ نے دلیل پیش کی ہے کہ بہتر ماحول اور نظم و ضبط برقرار رکھنے کے لئے یہ قدم اٹھا یا جارہا ہے۔ اس کے تحت طالب علموں کے لمبے بال رکھنے، ٹفن میں نان ویج کھانا لانے پر پابندی لگا دی گئی ہے۔ مینجمنٹ کمیٹی کے سکریٹری رنجیت جین کا الزام ہے کہ لمبے بال اور نان ویج پرپابندی لگانے پر انتظامی کمیٹی کے اساتذہ اور خود انہیں ل دھمکی دی جا رہی ہے جس کی شکایت وہ ضلع مجسٹریٹ اور سینئر پولس سپرنٹنڈنٹ سے بھی کریں گے۔ان کا کہنا تھا کہ طالب علموں کی حرکتیں سی سی ٹی وی کیمرے میں قید ہیں اور اب ان کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

مسٹر رنجیت جین نے واضح کیا کہ جن طالب علموں کو اسکول میں رہنا ہے، انہیں قوانین پر سختی سے عمل کرنا ہوگا۔ ٹفن میں نان ویج لانے کی اجازت نہیں ملے گی۔انہوں نے کہا کہ طالب علموں کو ابھی سے بال بڑھانے اور داڑھی رکھنے کی بھی کوئی ضرورت نہیں ہے۔ مسٹر جین نے کہا کہ ہم لو جہاد جیسی سرگرمیوں کو قطعی نہیں بڑھنے دیں گے، اس لئے لڑکوں اور لڑکیوں کی كلاسیں بھی الگ کی جا رہی ہیں۔

Loading...

انہوں نے بتایا کہ وزیر اعلی آدتیہ ناتھ یوگی سے ان کی بات ہو گئی ہے اور وہ کل 29 اپریل کو ان سے ملاقات کریں گے اور یہ کوشش کریں گے کہ تمام اسکولوں کو اس طرح کی ہدایات جاری کرا دی جائیں۔ دریں اثناء، میرٹھ کے ضلع مجسٹریٹ سمیر ورما نے آج بتایا کہ ان کے علم میں یہ معاملہ آنے پر انہوں نے ضلع اسکول انسپکٹر سے رپورٹ طلب کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ معاملے کی جانچ کرائی جا رہی ہے اور رپورٹ ملنے کے بعد اسکول كے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز