اب یوپی کے ایٹہ میں ’ کٹھوعہ واقعہ‘، عصمت دری کے بعد 8 سالہ بچی کا قتل

Apr 17, 2018 12:33 PM IST | Updated on: Apr 17, 2018 01:11 PM IST

ایٹہ۔ جموں وکشمیر کے کٹھوعہ میں آٹھ سالہ بچی کی عصمت دری اور پھر اس کے وحشیانہ قتل جیسا معاملہ اب اترپردیش کے ایٹہ میں بھی سامنے آیا ہے۔ یہاں شادی کی تقریب میں اپنے رشتہ داروں کے ساتھ شرکت کرنے آئی ایک 8 سالہ معصوم بچی کا عصمت دری کے بعد قتل کردیا گیا ہے۔ سینئر پولیس سپرنٹنڈنٹ اکھیلیش کمار چورسیا نے آج یہاں بتایا کہ شادی میں شرکت کی غرض سے اپنے خاندان کے ساتھ 8 سال کی معصوم بچی آئی تھی۔ یہ واقعہ رات تقریباً ڈیڑھ بجے اس وقت پیش آیا جب شادی کی تقریب میں سب لوگ مصروف تھے ۔ میوزک اور شہنائی کی آوازیں گونج رہی تھیں۔

ان سب چیزوں کا فائدہ اٹھا کر اسی وقت سونو نامی شخص نے موقع پا کر بچی کو اٹھا کر گلی میں لے گیا اور وہاں زیر تعمیر ایک مکان کے ایک کمرے میں لے جا کر اس بچی کی عصمت دری کی اور پھر وہیں گلا دبا کر اس کا قتل کردیا۔ شہنائی اور میوزک کی آواز میں بچی کی چیخ کسی کو نہیں سنائی دی۔

اب یوپی کے ایٹہ میں ’ کٹھوعہ واقعہ‘، عصمت دری کے بعد 8 سالہ بچی کا قتل

علامتی تصویر

انہوں نے بتایا کہ بہت دیر تک جب بچی لاپتہ رہی تو اس کی تلاش شروع کی گئی اور اس واقعہ کی اطلاع پولیس کو دی گئی۔ کافی دیر تک تلاش کرنے کے بعد بچی کی لاش اس مکان سے ملی جہاں یہ دل دہلانے والا واقعہ پیش آیا ۔ ملزم سونو کو گرفتا ر کرلیا گیا ہے اور لاش کو پوسٹ مارٹم کے لئے بھیج دیا گیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز