الیکشن کمیشن کا سیاسی پارٹیوں کو چیلنج ، 3 جون سے پارٹیاں ہیک کرکے دکھائیں ای وی ایم

May 20, 2017 05:32 PM IST | Updated on: May 20, 2017 05:32 PM IST

نئی دہلی : الیکشن کمیشن نے تمام سیاسی جماعتوں کو ای وی ایم ہیک کرنے کا چیلنج دیا ہے۔ کمیشن نے ہفتہ کو تمام پارٹیوں سے کہا ہے کہ وہ 3 جون سے ای وی ایم ہیک کرکے دکھائیں۔ الیکشن کمیشن نے کہا ہے کہ ہر سیاسی پارٹی کو مشین ہیک کرنے کے لئے چار گھنٹے کا وقت دیا جائے گا۔ خیال رہے کہ آج ہی الیکشن کمیشن نے ای وی ایم کا ڈیمو دکھایا اور دعوی کیا کہ ای وی ایم سے چھیڑ چھاڑ نہیں کی جا سکتی۔

قابل ذکر ہے کہ پانچ ریاستوں میں اسمبلی انتخابات اور دہلی ایم سی ڈی انتخابات کے بعد عام آدمی پارٹی سمیت کئی دیگر پارٹیاں الیکٹرانک ووٹنگ مشین کو ہیک کئے جانے کے امکان پر سوالات اٹھا رہی ہیں۔ انہی الزامات کو غلط ثابت کرنے کے لئے الیکشن کمیشن نے سیاسی جماعتوں کو چیلنج کیا ہے۔

الیکشن کمیشن کا سیاسی پارٹیوں کو چیلنج ، 3 جون سے پارٹیاں ہیک کرکے دکھائیں ای وی ایم

تصویر: اے این آئی

چیف الیکشن کمشنر نسیم زیدی نے 12 مئی کو اس معاملہ پر سیاسی جماعتوں کے ساتھ ملاقات بھی کی تھی۔ میٹنگ کے بعد اعلان کیا گیا تھا کہ پارٹیوں کو ان الزامات کو صحیح ثابت کرنے کا موقع دیا جائے گا۔ کمیشن کے ایک سینئر افسر نے بتایا تھا کہ سیاسی جماعتوں کو 29 مئی کے بعد کبھی بھی ای وی ایم میں خرابی ثابت کرنے کا چیلنج دیا جا سکتا ہے۔

افسر نے بتایا کہ سبھی سات قومی پارٹی اور 48 ریاستی سطح کی پارٹیوں کو کھلا چیلنج میں حصہ لینے کے لئے بلایا جائے گا۔ اس اوپن چیلنج میں تمام سبھی جماعتوں کو حال ہی میں اختتام پذیر اسمبلی انتخابات کے کسی بھی پولنگ اسٹیشن کی مشین کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کرنے کا موقع دیا جائے گا۔ چیلنج قبول کرنے کے لئے سیاسی جماعتوں کو ایک ہفتے کا موقع دیا جائے گا۔ اس کے بعد دعوی کرنے والے جماعتوں کو اس کے لئے الگ موقع دیا جائے گا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز