سرکاری اور غیرسرکاری اسکولوں میں ابتدائی درجات میں اردو پڑھانے پر زور

Mar 04, 2017 08:04 PM IST | Updated on: Mar 04, 2017 08:04 PM IST

لکھنؤ۔ اردو کی بقاء  اور فروغ میں مدارس اسلامیہ نے اہم کردار ادا کیا ہے ۔ اگر اسلامی مدارس نے اپنے نصاب میں اردو کو شامل نہ کیا ہوتا تو اردو کا وجود ہی ختم ہوچکا ہوتا ۔ ان خیالات کا اظہار معروف عالم ودانشور قاری محمد یوسف عزیزی نے لکھنؤ میں کیا ۔ اردو فلاح وبہبود کے حوالے سے کی جا رہی کوششوں کے باب میں یوسف عزیزی نے گورنر اتر پردیش سے بھی ملاقات کی۔

آل انڈیا قراء کونسل جمعیۃ قراء الہند لکھنؤ کے قومی صدر قاری محمد یوسف عزیزی نے اردو کی موجودہ صورت حال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے واضح کیا ہے کہ اگر اردو کو روزگار سے نہیں جوڑا گیا تو اس زبان کے وجود پر سوالیہ نشان لگ جائیں گے۔ اگر زبان کا تعلق روزگار سے وابستہ رہے گا تو لوگ اپنے معاشی مستقبل کو محفوظ رکھنے کے لیے بھی اردو پڑھیں گے اور اس عمل سے زبان کا مستقبل بھی محفوظ ہوجائے گا ۔

سرکاری اور غیرسرکاری اسکولوں میں ابتدائی درجات میں اردو پڑھانے پر زور

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز