جامعہ اردو علی گڑھ میں ’جدید ہندوستان کی تعمیرمیں سرسید کا کردار‘ پرمضمون نویسی مقابلہ

Sep 26, 2017 08:07 PM IST | Updated on: Sep 26, 2017 08:07 PM IST

علی گڑھ ۔ علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کےبانی سرسید احمد خاں کی دوصد سالہ یومِ پیدائش تقریبات کےتحت جامعہ اردو علی گڑھ اور دی علی گڑھ موومینٹ کے زیرِ اہتمام ’’ جدید ہندوستان کی تعمیر میں سرسید کا کردار‘‘ کے موضوع پرجامعہ اردوعلی گڑھ کیمپس میں مضمون نویسی مقابلہ منعقد کیا گیا ۔

اس مقابلہ میں مسلم یونیورسٹی سمیت شہر کےمتعدد اسکولوں وکالجوں کےطلبہ وطالبات نےشرکت کی اورسرسید کے کردار پرقلم بند کیے ۔

جامعہ اردو علی گڑھ  میں ’جدید ہندوستان کی تعمیرمیں سرسید کا کردار‘ پرمضمون نویسی مقابلہ

بانی درسگاہ سرسید احمد خاں کے200ویں یومِ پیدائش دنیا بھر کے مختلف خطوں میں منائی جا رہی ہے ۔ اسی تعلق سے جامعہ اردو میں بھی جدید ہندوستان کی تعمیر میں انکے کردار پر ایک مضمون نویسی مقابلہ رکھا گیا تھا۔  جہاں موجود ماہرسرسید پروفیسر رضاء اللہ خاں نے کہا کہ سرسید کی پہچان محض علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے قیام تک محدود نہیں ہے بلکہ انہوں نے زندگی کے مختلف میدانوں جیسے صحافت، تاریخ اور سائنس میں بیش قیمتی تعاون پیش کیا جس سے نوجوان نسل کو واقف کرانا وقت کی اہم ضرورت ہے ۔

ڈاکٹر جسیم محمد ڈاکٹر جسیم محمد

اس موقع پر طلباء سے اپیل کی گئی کہ وہ سرسید کے اصولوں کو اپنا کراپنے مستقبل کو روشن کریں اور اپنی زندگی کو کامیاب بنائیں۔ کنوینر پروگرام ڈاکٹر جسیم محمد نے بتایا کہ  جامعہ اردو میں سرسید کے یومِ ولادت پر ہرسال مضمون نویسی مقابلہ کا انعقاد کیا جاتا ہے، جس کا مقصد نوجوان نسل کو سرسید کی حیات و خدمات سے واقف کراکر سرسید شناسی کو فروغ دینا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز