پورا ہندوستان فرقہ پرستی کی زد میں ، کشمیریت کو زندہ رکھنے کیلئے متحد ہونا ضروری : فاروق عبداللہ

Oct 19, 2017 07:37 PM IST | Updated on: Oct 19, 2017 07:38 PM IST

سری نگر: نیشنل کانفرنس کے صدر و رکن پارلیمان ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے دعویٰ کیا ہے کہ پورا ہندوستان اس وقت فرقہ پرستی کی لپیٹ میں آچکا ہے اور اگر وقت پر اس رجحان کی روک تھام نہ کی گئی تو یہ تباہی اور بربادی کا سامان بن سکتا ہے اور ساتھ ہی ملک کی سالمیت اور آزادی کے لئے بھی بہت بڑا خطرہ ثابت ہوسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایسے نازک مرحلے پر ہم سب پر ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ ہم اپنی ریاست کی صدیوں کے آپسی بھائی چارے، مذہبی ہم آہنگی ، رواداری اور کشمیریت کو زندہ رکھنے کے لئے متحدہ ہوکر فرقہ پرست طاقتوں کی تمام چالوں کو ناکام بنائیں۔

فاروق عبداللہ نے ان باتوں کا اظہار جمعرات کو یہاں اپنی رہائش گاہ میں پونچھ کی معروف دانش گاہ جامع ضیاء العلوم کے طلباء سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ طلباء کا یہ وفد وادی کے 5روزہ دورے پر آئے ہیں اور اس دوران انہوں نے نیشنل کانفرنس صدر کے ساتھ اُن کی رہائش گاہ پر ملاقات کی ۔ فاروق عبداللہ نے کہا کہ اسلام ایک مکمل ضابطہ حیات ہے اور اسلام نے ہی کائنات میں صالح نظام کی بنیاد ڈالی۔ قرآن مجید ،جو اللہ کی آخری مقدس، بابرکت اور فضیلت والی کتاب ہے ،مسلمانوں کے لئے لائحہ عمل اور مشعل راہ ہے۔

پورا ہندوستان فرقہ پرستی کی زد میں ، کشمیریت کو زندہ رکھنے کیلئے متحد ہونا ضروری : فاروق عبداللہ

فاروق عبداللہ: فائل فوٹو

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز