کیا میں انسان نہیں، جیپ سے باندھ کر کھینچنا کہاں کی بہادری: فاروق احمد ڈار

May 24, 2017 09:22 AM IST | Updated on: May 24, 2017 09:23 AM IST

سری نگر۔ جموں و کشمیر کے بڈگام میں پتھربازوں کے خلاف فوج کی جیپ کے آگے ڈھال کی طرح استعمال کئے گئے فاروق احمد ڈار کے پاس ایک سوال ہے۔ وہ جاننا چاہتے ہیں کہ کسی بھی شخص کو کئی کلومیٹر تک گاڑی میں باندھ کر کھینچنا کیا بہادری کی بات ہے۔ ڈار نے کہا کہ نو اپریل کے واقعہ سے منسلک معلومات دینے کے لئے اسے اب تک پولیس یا فوج کی طرف سے نہیں بلایا گیا ہے، جس نے واقعہ کی کورٹ آف انكوائری کا حکم دیا تھا۔ تحقیقات کے بارے میں ڈار نے کہا کہ یہ محض ڈھکوسلہ ہے۔

میں ایک چھوٹا آدمی ہوں اور کسی کو کیوں فرق پڑے گا

کیا میں انسان نہیں، جیپ سے باندھ کر کھینچنا کہاں کی بہادری: فاروق احمد ڈار

فاروق احمد ڈار

ڈار نے کہا کہ وہ کبھی سنجیدہ تھے ہی نہیں۔ میں ایک چھوٹا آدمی ہوں اور کسی کو کیوں فرق پڑے گا۔ سرینگر لوک سبھا ضمنی انتخاب میں ووٹ دے کر واپس لوٹ رہے ڈار کا استعمال میجر لتل گوگوئی نے پتھراؤ کرنے والوں کے خلاف مبینہ طور پر ڈھال کے طور پر کیا تھا اور اسے اپنی جیپ کے بونٹ سے باندھ دیا تھا۔ اس واقعہ کا ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد لوگوں نے جم کر غصہ دکھایا تھا۔ اس کے بعد فوج نے کورٹ آف انكوائری کا حکم دیا۔ جموں و کشمیر پولیس نے بھی معاملہ درج کیا ہے۔ ڈار نے بتایا کہ واقعہ کو ایک ماہ سے زیادہ وقت ہو چکا ہے اور اب بھی مقامی پولیس نے مجھ سے اس کے بارے میں نہیں پوچھا ہے۔ یہاں تک کہ میرا بیان بھی درج نہیں کیا گیا ہے۔

اس واقعہ کے بعد سے بدل گئی زندگی

ووٹ دینے کے لئے گھر سے باہر نکلنے پر افسوس ظاہر کرتے ہوئے ڈار نے کہا کہ میں اس بات سے حیران ہوں کہ کیا کسی شخص کو جیپ سے باندھنا ان کی جوابی کارروائی کا حصہ ہے۔ اس نے کہا کہ میں نے ووٹ دیا اور بظاہر اس کے لئے سزا ہو گئی۔ ڈار کے مطابق، اس واقعہ کے بعد اس کی زندگی بدل گئی ہے۔ شال پر کڑھائی کرنے والے کاریگر فاروق احمد ڈار نے کہا کہ وہ پتھراؤ کرنے والا نہیں بلکہ ایک نوجوان شخص ہیں اور وہ صرف ووٹ دینے کے لئے گھر سے باہر گئے تھے۔ فوج نے گزشتہ ماہ ڈار کو جیپ کی بونٹ سے باندھ کر شہر بھر میں گھمایا تھا۔ ڈار کو جیپ سے باندھنے والے میجر ليتل گگوئی نے ایک پریس کانفرنس میں اس پر سیکورٹی فورسز پر پتھراؤ کرنے والے لوگوں کے گروپ میں شامل ہونے کا الزام لگایا، جسے اس نے مسترد کر دیا۔

گوگوئی کو اعزاز دئیے جانے سے میں حیران ہوں

ڈار نے کہا کہ اگر ایسا ہوتا تو وہ مجھے پولیس کے حوالے کر دیتے۔ اس نے کہا کہ متعلقہ میجر کو توصیفی کارڈ سے نوازے جانے کے بارے میں جان کر اسے تعجب ہوا۔ ڈار نے سوال کیا کہ کیا کسی شخص کو کئی کلومیٹر تک کھینچنا بہادری کا کام ہے؟

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز