یوپی کے بعد پانچ دیگر بی جے پی ریاستوں میں غیر قانونی ذبیحہ خانوں کے خلاف کریک ڈاون

Mar 29, 2017 12:09 PM IST | Updated on: Mar 29, 2017 12:11 PM IST

نئی دہلی۔ اترپردیش میں یوگی حکومت کے نقش قدم پر چلتے ہوئے بی جے پی کی اقتدار والی پانچ دیگر ریاستوں میں بھی غیر قانونی میٹ کی دکانوں کے خلاف کارروائی شروع ہو گئی ہے۔ ایک طرف جہاں جھارکھنڈ میں رگھوبر داس کی زیر قیادت بی جے پی کی حکومت نے پیر کے روز غیر قانونی ذبیحہ خانوں کو بند کرنے کا حکم دیا تو وہیں، دوسری طرف، اس کے دوسرے دن یعنی منگل کے روزراجستھان، اتراکھنڈ، چھتیس گڑھ اور مدھیہ پردیش میں بھی غیر قانونی مذبح کے خلاف کریک ڈاون شروع ہو گیا ہے۔

ٹائمس آف انڈیا کی ایک رپورٹ کے مطابق، ہری دوار میں میٹ کی تین دوکانیں سیل کر دی گئی ہیں جبکہ رائے پور کی گیارہ اور اندور میں واقع ایک دوکان کو بند کرا دیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ جے پور میں تقریباً چار ہزار غیر قانونی ذبیحہ خانوں کو بند کیا جانا ہے کیونکہ اپریل سے بلدیاتی کارپوریشن نے ان کے خلاف کارروائی کا حکم دیا ہے۔ میٹ بیچنے والوں نے ٹائمس آف انڈیا کو بتایا کہ ان چار ہزار دکانوں میں سے نو سو پچاس دکانیں منظور شدہ ہیں، لیکن گزشتہ سال اکتیس مارچ کے بعد کارپوریشن نے ان کے لائسنسوں کی تجدید نہیں کی۔

یوپی کے بعد پانچ دیگر بی جے پی ریاستوں میں غیر قانونی ذبیحہ خانوں کے خلاف کریک ڈاون

یوپی میں غیرقانونی ذبیحہ خانوں کے خلاف کریک ڈاون کے بعد الٰہ آباد میں ایک میٹ دکاندار اپنے خالی دکان میں بیٹھا ہوا۔ تصویر: رائٹرز۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز