وی ایچ پی کی نگرانی میں مندر کی تعمیر کے لئے پتھر لے کر ایودھیا پہنچے 3 ٹرک

Jul 06, 2017 11:56 AM IST | Updated on: Jul 06, 2017 11:56 AM IST

لکھنئو۔ رام مندر کی تعمیر کے لئے پتھروں سے لدے تین اور ٹرک وشو ہندو پریشد (وی ایچ پی) کی نگرانی میں ایودھیا کے رام سیوک پورم پہنچے ہیں۔ اس سے پہلے بھی ایک ٹرک پتھر گزشتہ ماہ یہاں لایا گیا تھا۔ سینئر وی ایچ پی لیڈر ترلوکی ناتھ پانڈے نے بتایا کہ رام مندر کی تعمیر کے لیے راجستھان کے بھرت پور سے دو ٹرک پتھر ایودھیا پہنچ چکے ہیں، لیکن مندر کے لئے ہمیں 100 ٹرک سے زیادہ پتھروں کی ضرورت ہو گی۔ انہوں نے بتایا کہ ٹرکوں سے لائے گئے پتھروں کو کارسیوک پورم واقع وی ایچ پی ہیڈ کوارٹر پر اتروايا گیا ہے۔ باقی پتھر کی سپلائی بھی آنے والے ایک یا دو دنوں میں ہو جائے گی۔

پانڈے نے کہا کہ اب ریاست میں بی جے پی کی حکومت ہے۔ لہذا اب مندر کی تعمیر میں کوئی رکاوٹ سامنے نہیں آئے گی۔ بابری مسجد رام جنم بھومی کیس سے منسلک ایک عرضی گزار خالد احمد خاں نے ایودھیا میں پتھروں کی آمد پر کہا ہے کہ یہ لوگوں میں ایک پیغام دینے کی کوشش ہے کہ بھگوا پارٹی رام مندر کی تعمیر کو لے کر سنجیدہ ہے۔ حالانکہ اس سے کیس پر کوئی فرق نہیں پڑے گا۔ ہمیں سپریم کورٹ اور آئین پر پورا بھروسہ ہے۔

وی ایچ پی کی نگرانی میں مندر کی تعمیر کے لئے پتھر لے کر ایودھیا پہنچے 3 ٹرک

لکھنؤ یونیورسٹی کی سابق وائس چانسلر روپ ریکھا ورما نے کہا کہ معاملہ سپریم کورٹ میں زیر غور ہے۔ لہذا اس طرح کی سرگرمیاں غیر قانونی ہیں اور ملک کے خلاف ہیں۔ اس سے فرقہ وارانہ ہم آہنگی بگڑ سکتی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز