فرقہ وارانہ ہم آہنگی: کشمیر کے مسلم گاؤں نے 4 یتیم بچوں کو لیا گود

جنوبی کشمیر میں ایک مسلم خاندان نے پڑوس میں رہنے والے چار ہندو یتیم پچوں کو گود لینے کا فیصلہ کیا ہے۔

Dec 28, 2017 04:14 PM IST | Updated on: Dec 28, 2017 04:14 PM IST

سری نگر۔ جنوبی کشمیر کے لیودورا میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی اور بھائی چارے کی ایک مثال دیکھنے کو ملی ہے۔ یہاں ایک مسلم خاندان نے پڑوس میں رہنے والے چار ہندو یتیم پچوں کو گود لینے کا فیصلہ کیا ہے۔

ان بچوں کی 40 سالہ ماں بیبی کول کی ہفتے کے روز وفات ہو گئی تھی۔ اس سے ٹھیک ایک سال پہلے ان کے شوہر کا بھی انتقال ہو گیا تھا۔ وہ پیشہ سے ایک ٹھیکیدار تھے اور طویل عرصے سے ذیابیطس سے متاثر تھے۔ کول کی وفات کے بعد ان کی 15 اور سولہ سال کی بیٹی کے ساتھ ساتھ 15 اورسات سال کے بیٹے یتیم ہو گئے۔ ان کے پاس سر چھپانے کے لئے ایک چھت کے علاوہ کچھ بھی نہیں ہے۔

فرقہ وارانہ ہم آہنگی: کشمیر کے مسلم گاؤں نے 4 یتیم بچوں کو لیا گود

جنوبی کشمیر کے لیودورا میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی اور بھائی چارے کی ایک مثال دیکھنے کو ملی ہے۔

بتا دیں کہ کول کو حکومت نے ایڈہاک پر ایک بینک میں نوکری دی تھی، تاکہ وہ اپنے بچوں کی پرورش کر سکے۔ لیکن نوکری ملنے کے تین مہینہ بعد ہی ان کا انتقال ہو گیا۔ کم عمر کے بچوں پر دکھوں کا پہاڑ ٹوٹ گیا۔ ایسے میں گاؤں والوں نے ان کی مدد کرنے کا فیصلہ کیا۔

کشمیر کی یہ کہانی وہاں کی صدیوں پرانی ہندو۔ مسلم اتحاد کی تصدیق کرتی ہے، جس کی ایک وقت مثال دی جاتی تھی۔ کول کی آخری رسوم میں سینکڑوں افراد نے شرکت کی۔ کم عمر کے اس کے بیٹے نے پورے ہندو رسم و رواج کے ساتھ اس کی آخری رسوم ادا کی۔ اس کے لئے گاوں والوں نے فون پر ہندو مذہب کے لوگوں سے معلومات حاصل کیں۔

کول کے پڑوسی شوکت احمد کہتے ہیں کہ یہ بالکل ویسے ہی تھا جیسے گزشتہ سال ان کے شوہر مہاراج کرشن کول کی موت کے بعد ہوا تھا۔ اس بار بھی بڑی تعداد میں لوگ آخری رسوم میں شامل ہوئے۔ ان کے گھر آئی آفت کے بعد گاوں والوں کو ان کے بچوں کو لے کر فکرمندی ہونے لگی۔

چاول اور پیسے جمع کئے

احمد نے بتایا کہ گاؤں والوں نے چار کوئنٹل چاول اکھٹا کیا اور بچوں کی پڑھائی کے ساتھ ساتھ دیگر چیزوں کے لئے پیسے اکھٹے کئے گئے۔ ہم امیر نہیں ہیں، لیکن اتنا ضرور یقینی بنایا کہ بچوں کو پریشانی نہ ہو۔ ہم لوگوں نے پیسے جٹائے اور ان کی ضروریات پوری کیں۔ یہ ہمارا فرض ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز