تقریر پر کیجریوال کو لگی پھٹکار، الیکشن کمیشن کے خلاف کورٹ جائے گی عام آدمی پارٹی

نئی دہلی۔ اپنے خلاف الیکشن کمیشن کے تازہ حکم کو مکمل طورپر غلط قرار دیتے ہوئے دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے آج کہا کہ وہ کمیشن کے تازہ فرمان کو عدالت میں چیلنج کریں گے۔

Jan 21, 2017 06:39 PM IST | Updated on: Jan 21, 2017 06:40 PM IST

نئی دہلی۔  اپنے خلاف الیکشن کمیشن کے تازہ حکم کو مکمل طورپر غلط قرار دیتے ہوئے دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے آج کہا کہ وہ کمیشن کے تازہ فرمان کو عدالت میں چیلنج کریں گے۔ واضح رہے کہ الیکشن کمیشن نے گوا میں 8 جنوری کو خطاب کے دوران مثالی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کرنے پر  اروند کیجریوال کی سرزنش کی ہے، جس میں عام آدمی پارٹی کے سربراہ نے ووٹروں سے کہا تھا کہ اگر کانگریس اور بی جے پی کی طرف سے پیسے کی پیشکش کی جائے تو وہ لے لیں اور صرف عام آدمی پارٹی کوہی  ووٹ دیں۔

الیکشن کمیشن نے اس پر نوٹس لیتے ہوئے گزشتہ روز جاری ہونے والے حکم میں کہا ہے کہ اگر وہ اسی طرح مثالی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کرتے رہے، تو ان کے اور ان کی پارٹی کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی، جس میں پارٹی کا انتخابی نشان یا رجسٹریشن منسوخ کرنے پر بھی غور کیا جاسکتا ہے۔

تقریر پر کیجریوال کو لگی پھٹکار، الیکشن کمیشن کے خلاف کورٹ جائے گی عام آدمی پارٹی

گیٹی امیجیز

الیکشن کمیشن کے حکم پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے مسٹر کیجریوال نے ٹویٹر پر کہا کہ " میرے خلاف الیکشن کمیشن کا حکم مکمل طور سے غلط ہے۔ زیریں عدالت نے میرے حق میں فیصلہ دیا ہے۔ لیکن الیکشن کمیشن نے عدالتی حکم کو بھی نظر انداز کردیا۔ میں کمیشن کے تازہ حکم کو عدالت میں چیلنج کروں گا"۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز