یوگی آدتیہ ناتھ کے وزیر اعلی بننے پر گورکھپور کے مسلمان خوش

Mar 20, 2017 03:50 PM IST | Updated on: Mar 20, 2017 03:50 PM IST

گورکھپور۔ گورکھ  پیٹھ کے صدر مہنت یوگی آدتیہ ناتھ بھلے ہی ہندوتو کے فائر برانڈ لیڈر ہوں، سخت گیر بھگوا رہنما کے طور پراپنی شناخت بنائی ہو اور مسلمانوں کے خلاف اپنے اشتعال انگیز بیانات کے لئے مشہور ہوں  لیکن گورکھپور کے مسلمان ان کے وزیر اعلی بننے سے خوش ہیں۔ اور گورکھپور کے مسلمانوں کا خوش ہونا کوئی بلا سبب نہیں ہے۔ سچائی تو یہ ہے کہ یوگی آدتیہ ناتھ نے کئی مواقع  پر گورکھپور اور اطراف کے بے سہارا مسلمانوں کی مدد کرکے بھید بھاو کے خلاف اپنے غیر جانبدارانہ رویے کا ثبوت دیا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ گورکھ ناتھ مندر احاطے اور آس پاس کے مسلم دکانداروں میں یوگی آدتیہ ناتھ کو وزیر اعلی بنائے جانے پر مسرت کا ماحول ہے۔

اسی ضمن میں گورکھ ناتھ مندر احاطے میں گذشتہ پچیس سال سے اپنی دکان چلانے والے مستقیم، علی، امتیازعلی ، امانت اللہ اور مشتاق احمد نے بتایا کہ گذشتہ 20سے 25 برسوں سے وہ لوگ چوڑی، سندور او ربتاشے کی دکان لگا رہے ہیں۔ یوگی جی نے ہمیشہ ان لوگوں کی مدد کی ہے اور کبھی کوئی خراب حالت آئی تو بھی انہوں نے ہمیشہ ان کی مناسب مدد کی ہے۔ اکھل بھارتیہ ادیوگ ویاپار منڈل کے سکریٹری افضل احمد، حقوق انسانی کمیٹی گورکھ پور ضلع کے صدر محمد رضی اور وقف درگاہ کے متولی سید سالار اور محمد اسلام ہاشمی نے بھی یوگی جی کو وزیر اعلی بنائے جانے پر گنگا جمنی تہذیب کو مزید استحکام ملنے کی امید ظاہر کی۔

یوگی آدتیہ ناتھ کے وزیر اعلی بننے پر گورکھپور کے مسلمان خوش

یوگی آدتیہ ناتھ: فائل فوٹو

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز