اب دو نہیں ، صرف ایک بچے کیلئے ہی ملے گا 6000 روپے کا زچگی فائدہ

Feb 18, 2017 04:01 PM IST | Updated on: Feb 18, 2017 04:02 PM IST

نئی دہلی : حاملہ اور دودھ پلانے والی خواتین کو حکومت کی جانب سے مجوزہ 6000 روپے کا زچگی فائدہ اب صرف ایک بچے کے لئے ملے گا۔ اس سلسلہ میں جلد ہی فیصلہ ہونے کی توقع ہے۔ بتایا جارہا ہے کہ یہ فیصلہ فنڈ کی کمی کے پیش نظر لیا جارہا ہے۔ ابھی تک زچگی کا فائدہ دو بچوں کے لئے ملتا تھا۔

انگریزی اخبار انڈین ایکسپریس کی خبر کے مطابق حکومت کی خاتون اور بہبود اطفال کی وزارت زچگی فائدہ کو ایک بچے تک محدود کرنے کی تیاری میں ہے۔ علاوہ ازیں اب تک مرکزی حکومت اس اسکیم کا 60 فیصد فنڈ دیتی تھی، اس کو بھی کم کرکے 50 فیصد کیا جا سکتا ہے۔

اب دو نہیں ، صرف ایک بچے کیلئے ہی ملے گا 6000 روپے کا زچگی فائدہ

اسکیم کو ایک بچے تک محدود کرنے کے پیچھے فنڈ کی کمی کی بنیادی وجہ بتائی جا رہی ہے۔ ذرائع کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ اس اسکیم کے لئے جتنا پیسہ چاہئے 2017-18 کا بجٹ اس سے کافی کم ہے۔

عام بجٹ میں اس اسکیم کو 2700 کروڑ روپے دیے گئے ہیں۔ اس سے ہر سال پیدا ہونے والے تقریبا 2.6 کروڑ بچوں میں سے 90 لاکھ بچوں کو ہی شامل کیا جا سکتا ہے۔ ذرائع کے مطابق اس کے لئے سالانہ 14512 کروڑ روپے کی ضرورت ہوتی ہے۔

واضح رہے کہ وزیر اعظم مودی نے اعلان کیا تھا کہ حاملہ اور دودھ پلانے والی خواتین کو زچگی فائدہ کے تحت 6000 روپے دیے جائیں گے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز