دہلی اسمبلی میں تقریبا 15000 گیسٹ ٹیچروں کو مستقل کرنے کا بل منظور

Oct 05, 2017 09:06 AM IST | Updated on: Oct 05, 2017 09:10 AM IST

نئی دہلی۔  دہلی اسمبلی میں کل سرو شکشا ابھیان کے تحت سرکاری اسکولوں میں کام کرنے والے تقریبا 15000 گیسٹ ٹیچروں کی ملازمت کو ریگولر کرنے کے لئے پیش کئے گئے ' سرو شکشا ابھیان بل -2017 کو پاس کردیا گیا۔ بل منظور کرنے کے لئے اسمبلی کا ایک دن کا خصوصی اجلاس طلب کیا گیا تھا۔ بل کو پیش کرتے ہوئے دہلی کے نائب وزیر اعلی اور وزیر تعلیم منیش سسودیا نے کہا کہ یہ 15000 گیسٹ ٹیچروں کی ملازمت کا نہیں، بلکہ تعلیم کا معاملہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ لیفٹننٹ گورنر انل بیجل نے اس بل پر چند سوال کھڑے کئے تھے اور یہ ظاہر هوتا ہے کہ مسٹر بیجل اس معاملے میں کچھ چھپا رہے ہیں۔

اسمبلی میں اپنی تقریر میں وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ "آخر گیسٹ ٹیچروں کی فائل وزیر تعلیم یا انہیں کیوں نہیں دکھائی جا رہی ہے؟ اور لیفٹننٹ گورنر کیا چھپانا چاہتے ہیں۔ ایسا لگتا ہے کہ وہ کچھ بے ضابطگیوں میں ملوث ہیں جسے وہ عوام کے سامنے نہيں آنے دینا چاہتے ہیں"۔ انہوں نے حیرت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آخر ان فائلوں میں کیا راز ہے کہ ا نہیں دکھایا نہیں جا سکتا ہے۔

دہلی اسمبلی میں تقریبا 15000 گیسٹ ٹیچروں کو مستقل کرنے کا بل منظور

دہلی اسمبلی میں اروند کیجریوال اور منیش سسودیا خوشگوار موڈ میں: فائل فوٹو۔

قابل ذکر ہے کہ مسٹر بیجل نے گزشتہ روز وزیر اعلی کو خط لكھ كر'سرو شکشا ابھیان بل 2017 کے تحت ان گیسٹ ٹیچروں کی ملازمت کو مستقل کرنے کے کابینہ کے فیصلے پر نظر ثانی کرنے کو کہا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز