حج 2017 : گرین کٹیگری کے درخواست گزارعازمین کو عزیزیہ میں ٹھہرانے کی شکایتیں 

Sep 18, 2017 06:17 PM IST | Updated on: Sep 18, 2017 06:17 PM IST

نئی دہلی: مرکزی حج کمیٹی کے سابق رکن حافظ نوشاد احمد اعظمی نے یہ استدلال کرتے ہوئے کہ اس سال گرین درجے کی درخواستیں دینے والے کوئی 20 ہزار ہندستانی عازمین حج کو مبینہ طور پر عزیزیہ میں ٹھہرایا گیا ، اسے اقلیتی اموراور وزارت خارجہ کے مابین تال میل کے فقدان کا نتیجہ قرار دیا ہے۔ سفر حج سے واپسی پر انہوں نے کہا کہ حج کا تعلق چونکہ غیر ملکی سفر سے ہے اورحج کمیٹی کی ذمہ داری درون ملک تک محدود ہے اس لئے وزارت خارجہ کے تحت ہی اس نظم کو پورا کیا جانا چاہئے۔

انہوں نے مرکزی حکومت سے درخواست کی کہ محکمہ حج کودوبارہ وزارت خارجہ کے حوالے کردیا جائے۔انہوں نے سفر حج کے آغاز کے مرحلے میں ویزا لگوانے میں پیش آنے والی دشواریاں بھی ختم کرنے پر زور دیا ۔ مسٹر اعظمی نے کہا کہ مجموعی طور پر اس سال فریضہ حج کی تکمیل بعافیت ہوئی اور ہندستانی حاجیوں کو ہندستانی قونصل خانے کی طرف سے واپسی کے سفر میں سامان کی ایئرپورٹ پر حوالگی کے نظم سے بھی کافی راحت ملی ۔

حج 2017 : گرین کٹیگری کے درخواست گزارعازمین کو عزیزیہ میں ٹھہرانے کی شکایتیں 

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز