چنڈی گڑھ چھیڑ چھاڑ معاملہ : متاثرہ کے والد آئی اے ایس افسر نے فیس بک پر بیان کیا اپنا درد، لوگوں سے کی یہ اپیل

Aug 06, 2017 03:05 PM IST | Updated on: Aug 06, 2017 03:05 PM IST

چنڈی گڑھ : ہریانہ بی جے پی میں ریاستی صدر سبھاش برالا کے بیٹے وکاس برالا اور اس کے دوست آشیش کو جمعہ رات کو دیر لڑکی سے چھیڑ چھاڑ کرنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔ پولیس نے ملزموں کی گاڑی کو اپنے قبضے میں لے لیا تھا۔ اگرچہ ہفتے کی شام کو وکاس کو ضمانت بھی مل گئی۔

اس پورے معاملہ میں  متاثرہ کے آئی اے ایس افسر والد کو گہری چوٹ پہنچی ہے اور انہوں نے فیس بک کے ذریعہ اپنا درد بیان کیا ہے۔ انہوں نے لکھا کہ میں اپنے ساتھ ہوئے ایک انتہائی خوفناک کو تجربہ شیئر کرنا چاہتا ہوں، میری بیٹی گزشتہ تقریبا رات آدھی رات کو اپنی گاڑی میں واپس آرہی تھی، جب ایک سفاری گاڑی اس کے پیچھے چلنے لگی ، یہ معاملہ سیکٹر 7 مارکیٹ میں 12:15 بجے سے شروع ہوا۔

چنڈی گڑھ چھیڑ چھاڑ معاملہ : متاثرہ کے والد آئی اے ایس افسر نے فیس بک پر بیان کیا اپنا درد، لوگوں سے کی یہ اپیل

demo pic

ملزموں نے ٹریفک سگنل پر میری بیٹی کی گاڑی کو روکنے کی کوشش کی ، لیکن وہ اپنی سوجھ بوجھ سے وہاں سے نکل گئی۔ ملزموں نے پھر اس کا پیچھا کیا اور بار بار اسے روکنے کی کوشش کی، میری بیٹی نے اس دوران پولیس کو مطلع کیا، اس دوران ملزموں نے اس کی گاڑی میں داخل ہونے کی کوشش بھی کی، مگر اس دوران پولیس آ گئی اور اسے پکڑ لیا ، ہمیں بھی 26 تھانے میں بلایا گیا۔

میرے پاس دو بیٹیاں ہونے کی وجہ سے مجھے لگتا ہے کہ اس معاملہ میں انصاف ملنا چاہئے اور غنڈوں کو سزا ملنی چاہئے۔ مجھے پتہ چلا ہے کہ یہ نوجوان بااثر خاندان سے تعلق رکھتے ہیں ، مگر قانون کو اپنا کام کرنا چاہئے، جیسے کہ ان سے توقع کی جاتی ہے، ہم سب جانتے ہیں کہ ظلم و ستم کے زیادہ تر کیس رپورٹ نہیں کئے جاتے ہیں ، یا پھر ملزموں کو چھوڑ دیا جاتا هے۔ اس طرح کے معاملات میں اگر ملزم بااثر خاندانوں سے ہو ، تو ان کا سامنا کرنے کی ہمت نہیں کرپاتے ہیں۔

انہوں نے اپنی پوسٹ میں لکھا ہے کہ اگر ایسے ملزموں کے خلاف ہم جیسے لوگ نہیں کھڑے ہوں گے ، تو ملک میں دوسرے لوگ بھی ایسا نہیں کر سکیں گے۔ اگر میں اس معاملہ میں اپنی بیٹی کے ساتھ نہیں ہوں ، تو میں اپنے والد ہونے کا فرض پورا کرنے میں ناکام سمجھا جاؤں گا، میں اس پورے معاملہ کو دو وجوہات کی بنیاد پر شیئر کر رہا ہوں، سب سے پہلے اس پورے معاملہ میں کیا ہوا، اس کی واضح معلومات سب کو ہونی چاہئے۔ دوسرا اگر اس کیس میں ضرورت پڑی تو آپ کی حمایت چاہوں گا، ہمارا صرف ایک ہی مقصد ہے کہ ملزموں نے جو کیا ہے، اس کی انہیں سزا ملے۔ ہمارا مقصد ان کے خاندان یا رشتہ داروں کو نقصان پہنچانے کا نہیں ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز