پیس پارٹی کے صدر ڈاکٹر ایوب کو نہیں ملی ضمانت ، عرضی گزارکو کاؤنٹر حلف نامہ کیلئے ایک ہفتہ کا وقت

Jul 17, 2017 11:38 PM IST | Updated on: Jul 17, 2017 11:38 PM IST

لکھنؤ: الہ آباد ہائی کورٹ کی لکھنؤ بنچ نے پیس پارٹی کے صدر ڈاکٹر ایوب کو بدسلوکی کے معاملے میں ضمانت دئے جانے کی عرضی پر عرضی گزارکو کاؤنٹر حلف نامہ دائر کرنے کے لئے ایک ہفتے کا وقت دیا ہے۔ ریاستی حکومت نے اپنا جواب پیش کر تے ہوئے ضمانت دئے جانے کی شدید مخالفت کی ہے۔ معاملے کی سماعت 25 جولائی کو ہوگی۔

جسٹس اننت كمار کی بنچ نے ڈاکٹر ایوب کی جانب سے دائر ضمانت کی عرضی پر آج یہ حکم دیا ہے۔ غور طلب ہے کہ کہ ڈاکٹر ایوب پر بدسلوکی کا الزام ہے۔ڈاکٹر ایوب کی ضمانت عرضی نچلی عدالت نے مسترد کر دی تھی۔ اس کے خلاف ڈاکٹر ایوب نے ہائی کورٹ میں عرضی دے کر ضمانت پر رہاکئے جانے کا مطالبہ کیا ہے۔

پیس پارٹی کے صدر ڈاکٹر ایوب کو نہیں ملی ضمانت ، عرضی گزارکو کاؤنٹر حلف نامہ کیلئے ایک ہفتہ کا وقت

ہائی کورٹ میں ایڈیشنل اٹارنی ونود کمار شاہی نے عرضی کی سخت مخالفت کی۔ ریاستی حکومت کی جانب سے جواب بھی پیش کر دیا گیا ہے۔ عدالت نے اگلی سماعت 25 جولائی کو مقررکیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز