جموں و کشمیر: فوج کو بڑی کامیابی، انکاونٹر میں حزب کمانڈر یاسین اٹومارا گیا ، دو فوجی جوان بھی شہید

Aug 13, 2017 06:43 PM IST | Updated on: Aug 13, 2017 06:59 PM IST

سری نگر : جموں وکشمیر کے شوپیاں میں انکاونٹر میں مارے گئے تین دہشت گردوں میں حزب کمانڈر یاسین اٹو عرف محمود غزنوی بھی مارا گیا ہے۔ یاسین بڈگام کے چاڈورا کا رہنے والا تھا۔ وہ چھ دسمبر 2015 کو حزب سے جڑا تھا او بعد میں اس کو بڈگام ضلع کا کمانڈر بنا دیا گیا تھا۔ شوپیاں کے اونيورا میں جمعہ کو انکاونٹر شروع ہوا تھا۔

فوج کی جانب سے تیار دہشت گردوں کی فہرست میں اٹو اے پلس پلس کٹیگری کا دہشت گرد تھا۔ ذاکر موسی بھی اسی کٹیگری میں آتا ہے۔ بتا دیں کہ شوپیاں انکاونٹر میں فوج کے دو جوان بھی شہید ہوئے ہیں ۔ ساتھ ہی تین جوان زخمی ہو گئے ہیں ۔

جموں و کشمیر: فوج کو بڑی کامیابی، انکاونٹر میں حزب کمانڈر یاسین اٹومارا گیا ، دو فوجی جوان بھی شہید

سرکاری ذرائع نے شوپیان مسلح تصادم میں مارے گئے دیگر دو دہشت گردوں کی شناخت عمر مجید شیخ ساکنہ کاٹھ پورہ یاری پورہ شوپیان اور عرفان الاشیخ ساکنہ مالدارہ شوپیان کے بطور کی ۔ شہید فوجیوں کی شناخت سپاہی الایاراجا پی ساکنہ تمل ناڈو اور سپاہی گوئیا سومیدومان ساکنہ مہاراشٹر کے بطور کی گئی ہے۔

شوپیاں کے اونيرا میں دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاع ملنے پر جموں پولیس، سی آر پی ایف اور 55 راشٹریہ رائفلس نے مشترکہ آپریشن کے دوران علاقہ کو گھیر لیا تھا، جس کے بعد دہشت گردوں نے فائرنگ شروع کر دی تھی۔ اس سے پہلے جمعہ کو دہشت گردذاکر موسی کو بھی گھیرے جانے کی خبر آئی تھی۔ذرائع نے بتایا کہ آونیورہ میں دہشت گردوں کو ہلاک کرنے کے لئے کم از کم تین رہائشی مکانات کو اڑا دیا گیا۔

ریاستی پولیس سربراہ ڈاکٹر شیش پال وید نے شوپیان میں جنگجو مخالف آپریشن میں حصہ لینے والے اہلکاروں کو شاباشی دیتے ہوئے مائیکرو بلاگنگ کی ویب سائٹ ٹویٹر پر کہا ’زین پورہ شوپیان میں آج صبح تین جنگجوؤں کو مار گرایا گیا۔ شاباش جوانوں‘۔ انہوں نے اپنے ایک اور ٹویٹ میں کہا ’اتوار کی صبح مارے گئے جنگجوؤں میں سے ایک کی شناخت یاسین ایتوکی بطور کی گئی جو کہ حزب المجاہدین کا آپریشنل کمانڈر تھا۔ یہ ایک بہت بڑی کامیابی ہے‘۔

ریاستی پولیس نے اپنے آفیشل ٹویٹر اکاؤنٹ پر کہا ’آونیورہ زین پورہ شوپیان میں ہوئے مسلح تصادم میں 3 دہشت گردوں کو ہلاک کیا گیا۔ یہ شوپیان میں رواں برس ہونے والا پہلا مسلح تصادم تھا۔ تصادم کے مقام سے اسلحہ و گولہ بارود برآمد کیا گیا‘۔ فوج کی شمالی کمان نے مہلوک فوجیوں کی تصویریں اپنے آفیشل ٹویٹر اکاؤنٹ پر پوسٹ کرتے ہوئے لکھا ’ہم اپنے فوجیوں کی عظیم قربانیوں کو سلام پیش کرتے ہیں۔ نیز شہداء کے کنبوں کے ساتھ تعزیت کا اظہار کرتے ہیں‘۔

یو این آئی کے ان پٹ کے ساتھ 

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز