وزارت داخلہ نےکرائی مودی حکومت کی کرکری ، اسپین ۔ مراقش سرحد کو بتایا ہند ۔ پاک سرحد

Jun 14, 2017 09:04 PM IST | Updated on: Jun 14, 2017 09:04 PM IST

نئی دہلی: وزارت داخلہ کی سالانہ رپورٹ میں روشنی سے جگمگاتی اسپین۔مراقش کی سرحد کو ہندستان اور پاکستان کی روشنی میں نہائی سر حد کے طور پر دکھائے جانے سے ہنگامہ مچ گیا ہے۔ وزارت کی سال 2016۔17 کی سالانہ رپورٹ میں ہندستان ۔پاکستان کی سر حد کے نام کے باب میں 647 کلو میٹر لمبی سرحد پر فلڈ لائٹ لگائے جانے کا ذکر کرتے ہوئے اسے مودی حکومت کی تین سالہ کامیابیوں میں شمار کیا گیا ہے۔ رپورٹ میں روشنی میں ڈوبی ہوئی سرحد کی تصویر بھی لگائی گئی ہے۔ میڈیا رپورٹوں کے مطابق جس تصویر کو ہندستان ۔ پاکستان کی سر حد کے طور پر پیش کیا گیا ہے وہ حقیقتا ا سپین اور مراقش کی سرحد ہے جس کا فوٹو 2006 میں اسپین کے فوٹو گرافر نے کھینچا تھا۔

ذرائع کے مطابق یہ معاملہ سامنے آنے کے بعد داخلہ سکریٹری راجیو مہرشی نے اس پر اپنے محکمہ سے وضاحت طلب کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس کی تفتیش کی جائے گی اور اگر غلطی ہوئی ہے تو یہ افسوس کی بات ہے۔

وزارت داخلہ نےکرائی مودی حکومت کی کرکری ، اسپین ۔ مراقش سرحد کو بتایا ہند ۔ پاک سرحد

واضح ر ہے کہ وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کے ذریعہ حال ہی میں ان کی وزارت کی تین سال کی کامیابیوں کی تفصیلات دینے کے لئے بلائی گئی پریس کانفرنس میں جاری کی گئی پریس ریلیز میں بھی کہا گیا ہے کہ حکومت نے ہندستان اور پاکستان کے درمیان 647 کلومیٹر طویل سرحد پر تیز روشنی کا انتظام کیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز