بیٹے کی یاد میں انکت کے والدین نے افطار پارٹی دینے کا کیا فیصلہ

مسلمان لڑکی کے ساتھ پیار کی وجہ سے قتل کر دیے گئے انکت سکسینہ کے والد یشپال سکسینہ ہندو۔ مسلم بھائی چارے کے لئے افطار پارٹی دینے جا رہے ہیں۔

Jun 02, 2018 04:37 PM IST | Updated on: Jun 02, 2018 04:39 PM IST

مسلمان لڑکی کے ساتھ  پیار کی وجہ سے قتل کر دیے گئے انکت سکسینہ کے والد یشپال سکسینہ ہندو۔ مسلم بھائی چارے کے لئے افطار پارٹی دینے جا رہے ہیں۔ 3 جون کو افطار پارٹی ہونا ہے۔ انکت کے والد کا کہنا ہے کہ وہ انکت سکسینہ کے لئے کچھ کرنا چاہتے ہیں اور بھائی چارے سے زیادہ بہتر اور کیا ہو سکتا ہے۔

یکم فروری کو مغربی دہلی کے رگھوبير نگر کے اے بلاک  میں مسلمان لڑکی سے محبت کی وجہ سے قتل کر دیے گئے انکت سکسینہ کے والد یشپال سکسینہ کے خاندان کی کل کائنات ہے 10 بائی 12 کے 12 کے اس ایک چھوٹے سے کمرے میں ڈبل بیڈ، ایک کولر فریج الماری، کمرے ہی میں باتھ روم اور کچن بتا دیتا ہے کہ یہ خاندان کس حال میں ہے۔ بیٹے کی موت کو 5 ماہ ہو چکے ہیں، گھر میں کمانے والا کوئی نہیں، پڑوسی اور محلے والوں کی مدد سے خاندان کا گزارا ہوتا ہے۔ یشپال سکسینہ کہتے ہیں وہ تو محلے کے ساتھ چھوٹی سی افطار پروگرام کرنا چاہتے تھے لیکن بہت زیادہ لوگ آنا چاہتے ہیں اور سب کی مدد سے افطار کا پروگرام ممکن ہو پایا ہے۔ یشپال سکسینہ کہتے ہیں کہ نفرت نہیں ہونی چاہئے اور اگر نفرت نہ ہوتی تو آج انکت زندہ ہوتا۔

بیٹے کی یاد میں انکت کے والدین نے افطار پارٹی دینے کا کیا فیصلہ

انکت سکسینہ کے احباب اور رشتہ داروں کے ذریعہ شروع کئے گئے ایف بی پیج کی اسکرین فوٹو۔

انکت سکسینہ قتل کیس کا ایک دردناک پہلو یہ ہے کہ ویران سے نظر آتے اس محلے اور گلی میں کئی دنوں تک سیاستدانوں اور حکام کا جماوڑہ لگا رہا۔ خاندان کی مدد کے لئے بڑے بڑے دعوے بھی کئے گئے لیکن کیجریوال حکومت کی 5 لاکھ کی مدد کے وعدے کی طرح کوئی وعدہ پورا نہیں ہوا۔ خاندان کی بس ایک ہی فریاد ہے اور وہ یہ کہ انہیں انصاف ملے۔

اکلوتے بیٹے انکت سکسینہ کے قتل کے بعد بھی یشپال سکسینہ کے ذہن میں مسلم کمیونٹی کے لئے کوئی نفرت نہیں ہے، جس كي وجہ سے یہاں بھائی چارہ کا ماحول بنا ہوا ہے۔ نم آنکھوں اور غمزدہ ماحول کے درمیان یشپال سکسینہ کہتے ہیں کہ بیٹے کی موت کے بعد کچھ لوگوں نے قتل کو فرقہ وارانہ رنگ دینے اور نفرت پھیلانے کی کوشش کی تھی،اس لئے آج بھی انہیں یہ ڈر ستاتا رہتا ہے کہ کہیں نفرت پھیلانے والی طاقتیں کامیاب نہ ہو جائیں۔

 اکلوتے بیٹے کی کمی تو کبھی پوری نہیں ہو سکتی لیکن اس پورے خاندان نے جس انسانیت اور انصاف پسندی اور كشادہ دلي کا ثبوت دیا ہے اس کے لئے اس کی جتنی بھی تعریف کی جائے، بہر حال کم ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز